سیاستدان نے احتجاجاً اپنا بچہ وزیراعظم ہاﺅس کے باہر بٹھا دیا

سیاستدان نے احتجاجاً اپنا بچہ وزیراعظم ہاﺅس کے باہر بٹھا دیا
سیاستدان نے احتجاجاً اپنا بچہ وزیراعظم ہاﺅس کے باہر بٹھا دیا

  


برطانیہ (ویب ڈیسک) برطانیہ میں لیبر پارٹی سے تعلق رکھنے والی رکن پارلیمنٹ جیس فلپس نے فنڈز کی قلت کی وجہ سے سکولوں کی جلد بندش پر احتجاج کرتے ہوئے اپنے بیٹے ڈینی کو وزیراعظم تھریسا مے کی سرکاری رہائش گاہ ”10 ڈاﺅننگ سٹریٹ“ کے باہر سڑک پر بٹھا دیا۔ جیس فلپس کا کہنا ہے کہ وزیراعظم تھریسا مے کو چاہئے کہ وہ ملک کے بچوں اور ان کے مستقبل کا خیال رکھیں، یہ بچوں کا حق ہے کہ وہ مستقل پانچ روز تک سکول جائیں اور تعلیم حاصل کریں۔ تاہم، جیس فلپس کے احتجاج کا کوئی فائدہ نہ ہوا کیونکہ وزیراعظم تھریسا مے اِن دنوں یورپی پارلیمنٹ کے اجلاس میں شرکت کیلئے ملک سے باہر ہیں۔ جیس فلپس کے بیٹے ڈینی کے سکول کی انتظامیہ کی جانب سے فنڈز کی قلت کی وجہ سے صرف جمعہ کو جلد سکول بند کرنے کا اعلان کیا گیا تو انہوں نے یہ احتجاج شروع کیا۔ برمنگھم سے تعلق رکھنے والی جیس فلپس سکولوں کا بجٹ بڑھانے کیلئے گزشتہ کئی مہینوں سے مہم چلا رہی ہیں۔

مزید : برطانیہ