”مجھے ڈراؤنے خواب آ رہے ہیں، آپ ایسا کریں کہ میرے پاس۔۔۔“ نوازشریف کو سزا سنانے والے جج نے (ن) لیگ کے کارکن سے کیا کہا؟ مریم نواز نے تہلکہ خیز انکشاف کر دیا

”مجھے ڈراؤنے خواب آ رہے ہیں، آپ ایسا کریں کہ میرے پاس۔۔۔“ نوازشریف کو سزا ...
”مجھے ڈراؤنے خواب آ رہے ہیں، آپ ایسا کریں کہ میرے پاس۔۔۔“ نوازشریف کو سزا سنانے والے جج نے (ن) لیگ کے کارکن سے کیا کہا؟ مریم نواز نے تہلکہ خیز انکشاف کر دیا

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز شریف نے انکشاف کیا ہے کہ میاں نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں سزا سنانے والے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے پارٹی کے کارکن سے کہا کہ مجھے ڈراؤنے خواب آتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں پریس کانفرنس کے دوران مریم نواز شریف نے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی خفیہ کیمرے سے کی گئی ریکارڈنگ دکھاتے ہوئے بتایا کہ جج ارشد ملک نے مسلم لیگ (ن) کے کارکن ناصر سے رابطہ کیا جن سے ان کی پرانی جان پہچان تھی۔ انہوں نے کہا کہ مجھے ڈراﺅنے خواب آنے لگے ہیں اور مجھے نیند نہیں آتی، نواز شریف کو سزا سنانے کے بعد میرا ضمیر مطمئن نہیں ہے، آپ کو میں ایک جگہ بتاتا ہوں، وہاں مجھ سے ملنے آئیں کیونکہ میں آپ کو کچھ ایسے پوائنٹس دینا چاہتا ہوں جن سے میاں نواز شریف کی بے گناہی ثابت ہوتی ہے، آپ وہ پوائنٹس نواز شریف تک پہنچا دیں تاکہ وہ ان کے وکلاءتک پہنچ جائیں۔

انہوں نے کہا کہ ناصر ابھی ان کی بتائی ہوئی جگہ پر ملنے کیلئے جا رہے تھے اور آدھے راستے میں ہی پہنچے تھے کہ جج ارشد ملک کا دوبارہ فون آ گیا جنہوں نے پوچھا کہ آپ کہاں ہیں؟ تو ناصر صاحب نے کہا کہ میں راستے میں ہوں اور آپ کی بتائی ہوئی جگہ پر ہی آ رہا ہوں جس پر انہوں نے کہا کہ آپ میرے گھر آ جائیں۔ ناصر صاحب نے کہا کہ مجھے آپ کے گھر کا نہیں معلوم جس پر انہوں نے کہا کہ آپ جہاں ہیں، وہیں رکیں، میں اپنی گاڑی بھیجتا ہوں، وہ آپ کو میرے گھر تک لے آئے گی۔

ناصر صاحب نے جج ارشد ملک سے کہا کہ مجھے تو قانونی زبان کا اتنا معلوم نہیں تو میرے ایک جاننے والے ہیں کیا میں انہیں ساتھ لے آﺅں جس پر جج ارشد ملک نے پوچھا کہ کیا وہ آپ کے اعتماد کے شخص ہیں جس پر ناصر صاحب نے کہا کہ جی بالکل میرے اعتماد میں بندے ہیں جس پر انہیں ساتھ لانے کی اجازت بھی دیدی۔

مزید : اہم خبریں /قومی


loading...