دشمن سے لڑنا ہے تو قو م اور فوج کو ایک پیج پر ہونا چاہئے: سراج الحق

      دشمن سے لڑنا ہے تو قو م اور فوج کو ایک پیج پر ہونا چاہئے: سراج الحق

  

لاہور (آن لائن)امیرجماعت اسلامی پاکستان سینیٹرسراج الحق نے کہاہے کہ اسٹیبلشمنٹ اپنا نیوٹرل رول بحال کرے،دشمن سے لڑنا ہے تو قوم اور فوج کو ایک پیج پر ہونا چاہئے جماعت اسلامی مہنگائی کے خاتمے،بے روزگاری اور عوام کے حقوق کے لئے تحریک چلائے گی اور ہر مظلوم کی آواز بنے گی۔ حکومت یرغمال، اصل حکمرانی مافیا زکی ہے۔حکومتی رٹ کہیں نظر نہیں آتی۔جمہوری حکومتوں میں اسٹیبلشمنٹ کا کردار غیر جانبدار ہوتاہے۔ہمارے ملک کی اسٹیبلشمنٹ الیکشن پر اثر انداز ہوتی ہے،ہر جگہ اس پرلوگ بات کرتے ہیں اور انگلیاں اٹھتی ہیں۔ جتنی حکومت پر بات ہوتی ہے اتنی ہی اسٹیبلشمنٹ پر بھی بات ہوتی ہے۔اسٹیبلشمنٹ کو کسی ایک پارٹی کے ساتھ نتھی ہونے کی بجائے اپنی غیر جانبداری کے تاثر کو بہتر بنانے کیلئے سوچنا ہوگا۔ فوج کو مضبوط بنانا پاکستان کی ضرورت ہے۔بھارت جیسا مکار دشمن اژدھے کی صورت میں سرحدوں پرموجود ہے۔ دشمن کے مقابلے کیلئے فوج اورقوم کو ایک پیج پر آنے کی ضرورت ہے۔فوج کا تقدس و خوشحالی غیرجانبدارانہ کردار میں ہی ہے۔قوم اپنی فوج سے محبت کرتی ہے۔کوئی جوان شہید ہوتا ہے تو ہر گھر میں ماتم ہوتا ہے۔جب فوج اپنا وزن کسی خاص پلڑے میں ڈالتی ہے تواس کا خاص اثر ہوتاہے اسلام آباد میں پانچ مندر پہلے ہی موجود ہیں ان کی بحالی کے اقدامات کئے جائیں۔عمران خان سمیت ہر حکمران سمجھتا ہے کہ ان کا متبادل نہیں۔ماضی میں بھی جو حکمران رہے وہ فوج کی سرپرستی حاصل ہونے کے دعوے فوج کی حمایت میں بننے والی حکومتیں کوئی رزلٹ نہیں دے سکیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں منصورہ میں مجلس عاملہ کے دوروزہ اجلاس کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سینیٹر مشتاق احمد خان،رکن قومی اسمبلی مولانا عبد الاکبر چترالی،کے پی کے اسمبلی کے رکن عنایت اللہ خان،سند ھ اسمبلی کے رکن سید عبد الرشید اور سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف بھی موجودتھے۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ اگر آج فیصلوں پر ندامت کا ٹیسٹ ہوتا تو بائیس کروڑ عوام کا رزلٹ مثبت آسکتا ہے۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -