کووڈ۔19سے دیگر شعبوں کے ساتھ لائیو سٹاک او ر پولٹری کا کاروبار بھی متاثر ہوا

  کووڈ۔19سے دیگر شعبوں کے ساتھ لائیو سٹاک او ر پولٹری کا کاروبار بھی متاثر ہوا

  

پشاور (سٹاف رپورٹر)محکمہ لائیو سٹاک خیبر پختونخوا کے دفتر پشاور میں کورونا کے 100دن مکمل ہونے کے حوالے سے ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں ڈائریکٹر جنرل لائیو سٹاک ڈاکٹر عالم زیب، پرنسپل اینیمل ہیسبنڈری ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ ملک ایاز وزیر،،ڈائریکٹر لائیو سٹاک ڈاکٹر اقبال خٹک، ڈپٹی ڈائریکٹر لائیو سٹاک فاٹا سجاد وزیر اور محکمہ کے دیگر افسران و ملازمین نے شرکت کی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈی جی لائیو سٹاک نے کہا کہ کوڈ۔19کی عالمی سطح پر چلنے والی عالمی حالیہ وباء جہاں صحت کیلئے سنگین خطرات کا باعث بنی وہاں معیشت پر بھی اثر انداز ہوئی اور خاص طور پر لائیو سٹاک و پولٹری کے شعبوں کو بری طرح متاثر کیا، لاک ڈاؤن کی وجہ سے نقل و حمل، رسد اور تجارتی سرگرمیوں پر عائد پابندیوں کی وجہ سے لائیو سٹاک اور پولٹری کے سیکٹر کو پیداواری صلاحیت میں خاطر خواہ کمی کا سامنے کرنا پڑا تاہم مشکل کی اس گھڑی میں محکمہ لائیو سٹاک خیبر پختونخوا نے کوڈ۔19کے خلاف جہاد میں وزیر لائیو سٹاک محب اللہ خان کی ہدایت پر حکومت کے شانہ بشانہ اپنی خدمات انجام دیں، محکمہ لائیو سٹاک کے کارکنان نے بنیادی احتیاطی تدابیر کے ساتھ خیبر پختونخوا کے عوام کیلئے لائیو سٹاک اور پولٹری سے حاصل شدہ مصنوعات کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے اپنا کردار ادا کرتے رہے اور کوڈ۔19کے تناظر میں شعبہ لائیو سٹاک پر مرتب ہونے والے منفی اثرات کا جائزہ لینے کی غرض سے صوبائی اور ضلع سطح پر ریلیف سیل کا قیام عمل میں لایا جس کا مقصد لائیو سٹاک سے وابستہ لوگوں کو درپیش مسائل جاننا اور ان کی روشنی میں شعبے کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے کیلئے موثر تجاویز مرتب کرنا تھا تاکہ صوبے میں فوڈ سیکیورٹی اور فوڈ سیفٹی کو یقینی بنایا جا سکے، محکمہ کے کارکنان نے فیلڈ میں کوڈ۔19کے خلاف احتیاطی تدابیر کی آگہی دلائی۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ لائیو سٹاک شعبہ توسیع کا ایک اہم قدم صوبے میں لائیو سٹاک اور پولٹری مصنوعات کے بیف، مٹن، چکن، انڈے، دودھ اور دیگر مصنوعات کی فراہمی کو یقینی بنانا تھا۔محکمہ کی جانب سے کئے جانیوالے اقدامات کی بدولت نہ صرف صوبے کے عوام کو معیاری خوراک کی فراہمی ہوئی بلکہ مصنوعات کی قیمتوں میں بھی استحکام پیدا ہوا۔تقریب میں عید الاضحٰی کے پیش نظر جانوروں کی دیگر صوبوں سے نقل و حرکت اور مویشی منڈیوں میں خرید فروخت کے دوران رش کے باعث کوڈ۔19میں اضافے کے خطرات، جانوروں سے انسانوں کو منتقل ہونے والی دیگر بیماریوں بالخصوص کانگو کے پھیلاؤ کی روک تھام کے حوالے سے ضلع کے داخلی اور خارجی راستوں پر لائیو سٹاک کی چیک پوسٹ کے قیام، مویشیوں میں چیچڑ کے خاتمے اور جانوروں کو لانے والی گاڑیوں میں جراثیم کش سپرے، کسانوں اور عوام الناس کو کانگو بخار سے بچانے کیلئے حفاظتی اقدامات کی غرض سے آگہی مہم کا انعقاد جیسے امور پر غور و خوض کیا گیا۔اس موقع پر محکمہ کی جانب سے کورونا کے دوران اٹھائی جانے والے حکمت عملی کو انتہائی خوش آئند قرار دیا گیا اور وباء کے دوران محکمہ کے دو ملازمین فضل احد اور عرفان اللہ سمیت صوبے کے دیگر جاں بحق ہونے والوں کے درجات کی بلندی کیلئے دعا کی گئی۔ بعد ازاں ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر عالم زیب نے کورونا کے 100دنوں کے دوران ہنگامی طور پر بہتر خدمات سر انجام دینے والے ملازمین میں توصیفی سرٹیفکیٹ تقسیم کئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -