حالات سنگین، پاکستان کو جنرل الیکشن کی ضرورت، مولانا فضل ا لرحمن

حالات سنگین، پاکستان کو جنرل الیکشن کی ضرورت، مولانا فضل ا لرحمن

  

مظفرگڑھ، جتوئی (نامہ نگار)جمعیت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن۔۔۔ عباسی ہاوس جتوئی صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلام آباد میں مندر کی تعمیر(بقیہ نمبر31صفحہ7پر)

کا فیصلہ اسلامی نظریاتی کونسل کو کرنا چاہیے جو ہمارے آئین کی پاسبان ہے ایک اور سوال پر جمعیت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ اس وقت پاکستان کو جنرل الیکشن کی ضرورت ہے بلدیاتی الیکشن کرائے گئے تو جمہوریت کے لیے نقصان دہ ہونگے اور ملک کے ساتھ غداری ہوگی اور ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ اسلام آباد دھرنے میں باقی جمہوری پارٹیز اگر جمعیت علماء اسلام ف کی طرح طاقت کا مظاہرہ کرتیں تو حالات کچھ اور ہوتے اور میں نے بیک ڈور سیاست کبھی نہیں کی اور چینی گندم کمیشن رپورٹ اوپن ہونے پر کہا ہے کہ پاکستان میں صرف نیب ہو یا اور کوئی ادارہ انکا قانون اپوزیشن پر لاگو ہوتا ہے حکومت کے انتہائی قریبی لوگ میگا کرپشن میں ملوث ہیں متعلقہ ادارے انکے خلاف کاروائی نہیں کرتے انہوں نے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو لولی پاپ دیا جارہا ہے اس طرح کا انتظامی ڈھانچہ سیاسی اور انتظامی حوالے سے انتہائی ناکام ثابت ہوگااس موقع پر سابق وفاقی وزیر دفاعی پیداوار سردار عبدالقیوم خان جتوئی کے فرزند امیدوار ایم این اے سردار محمد داؤد خان جتوئی، جمعیت علماء اسلام ف سندھ و صدر متحدہ مجلس عمل راشد محمود سومرو، جمعیت علماء اسلام ف ضلع مظفرگڑھ مولانا یحیی عباسی، میاں مولانا محمد ہاشم، مولانا عبدالہادی، مولانا اللہ وسایا، مفتی محمد وسیم طاہر، شیخ محمد فرحان ایوب، رانا محمد اقبال ودیگر علماء کرام معززین علاقہ موجود تھے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -