پیپلز پارٹی کا یوم سیاہ،ملتان سمیت مختلف شہروں میں تقریبات

      پیپلز پارٹی کا یوم سیاہ،ملتان سمیت مختلف شہروں میں تقریبات

  

ملتان، ڈہرکی، خانیوال، بہاولپور، کبیروالا (نمائندہ خصوصی، نمائندگان پاکستان)پاکستان پیپلز پارٹی ملتان ڈویژن کے صدر خالد حنیف لودھی کی زیر صدارت انکی رھائشگاہ لودھی ھاوس میں پاکستان پیپلز پارٹی کے یوم سیاہ کی تقریب منعقد ھوئی جس میں ممبر پنجاب اسمبلی سید(بقیہ نمبر42صفحہ6پر)

علی حیدر گیلانی مہمان خصوصی تھے 5 جولائی 1977 کا دن ملکی تاریخ کا سیاہ ترین اور شرمناک دن ھے جس روز قائد عوام شھید ذوالفقار علی بھٹو کی پہلی منتخب جمہوری حکومت پر آمر ضی نے شب خون مار کر قوم و ملک کو مسائل کے گرداب میں جھونکا اور جس کا خمیازہ قوم و ملک آج تک بھگت رھے ھیں ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلز پارٹی ملتان کے ڈویژنل صدر خالد حنیف لودھی اور ممبر پنجاب اسمبلی سید علی حیدر گیلانیی نے کیا جبکہ اس موقع پر ڈویژنل جنرل سیکرٹری و سابق ممبر پنجاب اسمبلی ڈاکٹر جاوید صدیقی، سٹی جنرل سیکرٹری اے۔ڈی بلوچ، قائمقام سٹی صدر ساجد بلوچ، ڈویژنل سیکرٹری انفارمیشن ایم سلیم راجہ، ممبر جنوبی پنجاب کونسل، ملک آصف رسول اعوان، صدر پیپلز لائرز فورم جنوبی پنجاب شیخ غیاث الحق ایڈووکیٹ، ضلعی نائب صدر ملک اسد، پارٹی ٹکٹ ھولڈر شاھد رضا صدیقی، ڈی۔ایس۔آئی پیپلز پارٹی ملتان ڈسٹرکٹ و ڈویژنل انچارج میڈیا سیل رئیس الدین قریشی، سٹی نائب صدور ملک الطاف وینس مرزا نذیر بیگ، سینئر نائب صدر خواتین ونگ جنوبی پنجاب راضیہ رفیق، رہنما پیپلز لائرز فورم فخر جہاں دریشک، ملک صفدر پہوڑ اور عمران ٹیپو نے بھی خطاب کیا جبکہ اس موقع پر ڈویژنل جنرل سیکرٹری ڈاکٹر جاوید صدیقی نے بہاولپور میں جنوبی پنجاب کے سب سیکرٹریٹ کے خلاف قرارداد پیش کی جسے تمام پارٹی عہدیداران نے متفقہ طور پر منظور کیا اور مقررین نے خطاب کرتے ھوئے کہا کہ پیپلز پارٹی بہاولپور میں جنوبی پنجاب کے سب سیکرٹریٹ کو سختی سے مسترد کرتی ھے کیونکہ یہ آدھا تیتر اور آدھا بٹیر کے مترادف ھے ایک بار پھر شب خون مارا گیا ھے جسکی جتنی مذمت کی جائے کم ھے اور پاکستان پیپلز پارٹی صرف اور صرف صوبہ جنوبی پنجاب کے قیام کے سوا کوئی سمجھوتہ ہرگز نہیں کرے گی اور سرائیکی عوام کو کبھی تنہا نہیں چھوڑے گی اس موقع پر ملک افتخار، رمضان کمبوہ، نوید ھاشمی ایڈووکیٹ، عدنان حیدری ایڈووکیٹ، شبیر علوی، شمشاد سیال،عمران وینس،شبانہ گل, رانا افضل جاوید ودیگر شریک تھے۔پیپلزپارٹی انسانی حقوق ونگ جنوبی پنجاب کے سابق صدر سلیم الرحمن میو کی رہائش گاہ محلہ نظام آباد پرانا شجاعباد روڈ پر 5جولائی یوم سیاہ کے سلسلہ میں تقریب منعقد ہوئی جس میں 5جولائی 1977ء کے ضیاء الحق کے غیر جمہوری کے اقدام کی شدید مزمت کی گئی اور اسے ملک میں بدترین آمریت کے آغاز سے منصوب کیاگیا سلیم الرحمن میو،مغیث شہزادہ بھٹو،ملک ظفر اقبال اعوان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیشہ سے ترقی پسند پسماندہ طبقات کی ترجمان پیپلز پارٹی کو ختم کرنے کی کوششیں کی گئیں اور یہ سازیشیں آج بھی اسی طرح جاری ہیں انہوں نے کہا کہ 5جولائی کو جمہوری حکومت کو تختہ الٹ کر پاکستان کو ہمیشہ کے لیے غیر مستحکم کرنے کی سازش کی گئی جس پر آج بھی عمل ہو رہا ہے انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے پاکستان کے لیے جتنی قربانیاں دیں آج تک کسی سیاسی جماعت نے نہیں دیں اور جتنی ملکی ترقی استحکام پیپلز پارٹی کے ادوار میں ہوا کسی کی حکومت میں نہیں ہوا قائد عوام زوالفقار علی بھٹو نے ملک میں جو انقلاب لائے اس کے بعد کوئی مائی کا لال ان جیسا کام نہ کر سکا باتیں دعوے بہت کئے جاتے ہیں لیکن عملی کام کوئی نہیں کرتا انہوں نے کہا کہ آج بھی پی پی پی قیادت کے خلاف جھوٹے مقدمات قائم کئے گئے ہیں جو کبھی ثابت نہیں ہوتے جن کی ایک مثال راجہ پرویز اشرف پر رینٹل پاور کیس کی ہے جس میں وہ باعزت بری ہو چکے ہیں اس موقع پر بھٹو خاندان کے تمام شہداء اور جدوجہد میں شہید ہونے والے کارکنوں کے لیے فاتحہ خوانی اور دعا بھی کی گئی تقریب میں نزیر کاٹھیا،جمیل بھٹی،سید عرفان شاہ،ملک اختر علی،حنیف رضا،اعجاز بھٹی،ملک امجد حسین،سلیم ڈاہر نے بھی شرکت کی۔پاکستان پیپلز پارٹی ملتان ڈویڑن کے زیر اہتمام 5جولائی یوم سیاہ کی تقریب منعقد کی گئی،جس کی صدارت ایم سیلم راجہ نے کی،مہمانان خصوصی ٹکٹ ہولڈر شاہد رضا صدیقی،اللہ بخش بھٹہ،حاجی خلیل راں تھے،یوم سیاہ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین ایم سیلم راجہ، شاہد رضا صدیقی،اللہ بخش بھٹہ، حاجی خلیل راں،محمد علی بلوچ،سلطان خان، ملک ممتاز نعیم نے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو شہید کی منتخب عوامی حکومت پر شب خون مارا گیا آئینی اور جمہوری حکومت کا تختہ الٹایا گیا،ضیاء الحق ڈکٹیٹرکا سیاہ دور حکومت ظلم وناانصافی کا دور تھاپیپلز پارٹی کے کارکنوں کو کوڑے مارے گئے قید وبند اور سخت سزائیں دی گئی جبکہ بھٹو شہید نے اپنے دور حکومت میں اسلامی کانفرنس کرائی 1973کا آئین دیا کراچی سٹیل مل دی کشمیر کی آزادی اور ملک کو ایٹمی قوت بنا کر پاکستان کو استحکام دیا اور اداروں کو مضبوط کیا بھٹو شہید نے غریبوں کو مفت پلاٹ دئیے اور غریبوں کی آواز بن کر دنیا میں غریب ممالک کا وقار بلند کیا عالمی دنیا میں غریب ممالک کے لئے تھرڈ ورلڈ اور اسلامک ورلڈ کا شعور اجاگر کیا بھٹو شہید کی عظیم بیٹی بے نظیر بھٹو نے اپنے شہید باپ کے مشن کو جاری رکھا آج ملک میں حقیقی جمہوریت بھٹو شہید اور بے نظیر بھٹو کی قربانی کی وجہ سے ہے احتجاجی اجلاس میں ملک امجد حسین،اکبر عاربی،حامد محمود گیلانی نے بھی خطاب کیا،سرکاء نے احتجاجی اجلاس میں جئے بھٹو،جئے بے نظیر کے نعرے بلند کئے اور آمریت مردہ باد جمہوریت زندہ باد کے نعرے بھی لگائے۔ڈہرکی اور میرپور ماتھیلو میں پاکستان پیپلز پارٹی شھید بھٹو ضلع گھوٹکی کی طرف سے الگ لگ احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں جو شہر کے مختلف علاقوں کا گشت کرتے ہوئے ریلی کے شرکاء ڈہرکی پر یس کلب اور میرپور ماتھیلو پریس کلب پہنچنے اور پریس کلبز کیسامنے ریلی کیشرکا پاکستان پیپلز پارٹی شھید بھٹو ضلع گھوٹکی کے جنرل سیکریٹری کامریڈ شیرمحمد چاچڑ. نظیر احمد کلوڑ. اصغر علی بھٹو. مجاہد علی گبول سعید احمد منگی. وسیم اور دیگر نیخطاب کرتے ہوئے کہا کہ 5جولائی 1977 کے دن عوام کے ووٹ سے بھاری اکثریت میں کامیاب ہونے والے وزیراعظم قائد عوام ذوالفقار علی بھٹو کی حکومت کا آمر ضیاء الحق تختہ الٹ کر قائد عوام ذوالفقار علی بھٹو کوگرفتارکیا تھا اس دن سے ہم 5 جولائی کو سیاہ دن کیطورپرمناتے ہیں.پی ایل ایف کے زیراہتمام یوم سیاہ کے حوالے سے تقریب منعقد ہوئی۔تقریب کے مہمان خصوصی پی ایل ایف کے ڈویژنل سینئر نا ئب صدر نوید احمد بٹ ایڈووکیٹ اورڈویژنل جنرل سیکرٹری سید جواد شاہد نقوی ایڈووکی تھے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سید جواد شاہد نقوی نے کہاکہ 5جولائی یوم سیاہ ملکی تاریخی کا سیاہ ترین دن تھا۔جس روز ضیاء آمریت نے منتخب جمہوری حکومت پر شب خون مارا۔انہو ں نے کہاکہ اٹھارویں ترمیم کو چھیڑنا وفاق کی خلاف سازش ہے۔پاکستان کا قیام جمہوری عمل کا نتیجہ ہے اس کی بقاء اور استحکام جمہوریت سے وابستہ ہے۔پیپلزپارٹی نے ہمیشہ آئین وقانون اور جمہوری اقدار کی سربلندی کے لیے ہر اول دوستہ کا رول اداکیا اورقربانیاں دیں۔نوید احمد بٹ نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ضیاء ڈکٹیٹر نے پہلی منتخب عوامی حکومت پر شب خون مارکر جو بنیاد رکھی اس کے نتیجہ ریاستی ادارے کمزور ہوئے اور ملک وقوم اس کا خمیازہ بھگت رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ موجودہ نااہل مسلط کردہ حکمران بری طرح ناکام ہوچکے ہیں۔ہر طر ستیاناس،تبدیلی لانے کے دعوے کرنے والے تبدیلی کی,,ت،، بھی نہیں لا سکے۔قبل ازیں پی ایل ایف کے مرکزی جنرل سیکرٹری ممبر پنجاب بار کونسل جاوید ہاشمی ایڈووکیٹ کی وفات پر فاتحہ خوانی کی گئی۔اور پیپلزپارٹی کے شہداء کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔ تقریب میں رانا خالدمحمود،حافظ عبدالمجید،مدثر خان ڈاہا، عاصم خان، الطاف حسین،رانا عظمت رحمان، شیخ ذیشان حسین، مقبول چوہدر ی،محسن عباس جوئیہ، مہر خاور ریاض مرالی، عامر عزیز سیال،رانا سلیم انجم اوردیگروکلاء نے شرکت کی۔ بلیک ڈے آج کے دن پانچ جولائی 1977ایک ظالم جابر جرنیل نے ایک منتخب حکومت پر شب خون مارتے ھوے پاکستان کے پہلے براہ راست منتخب جمہوری حکومت کا تختہ الٹ کر خود اقتدار پر قابض ہوگیا اور گیارہ سال اس نے پاکستان پیپلز پارٹی اس کی قیادت اور اس کے کارکنان پر ظلم کے پہاڑ گرا دئیے جیلوں سے لیکر شاھی قلعہ تک اور سرعام ننگا کر کے کوڑے مارنے اور پھانسیاں دینے تک کی انتہا کر دی لیکن بھٹو ازم کو ختم نہ کر سکا اور پاکستان پیپلز پارٹی کل بھی قائم دائم تھی اور آج بھی قائم دائم ہیپاکستان پیپلزپارٹی سٹی بہاول پورنے 5 جولائی کے حوالہ سے یوم سیاہ منایااس موقع پر ڈپٹی انفارمیشن سیکرٹری غلام عباس جنرل سیکرٹری احمد فراز سنیر نایب صدر ملک مختیار کہنوں نائب صدر ظفر خان بلوچ کارکنان میں شامل شیخ عبدالحیم فیصل بھائی کمیل مہدی علی رضا قصور عباس موجودتھے اس موقع پرڈپٹی انفارمیشن سیکریٹری غلام عباس نے کہا ہے کہ 5 جولائی کا بدترین سانحہ ہے منتخب حکومت کو ایک جرنیل نے عالمی سازش کا حصہ بن کر ختم کیاملک کی تباہی کی بنیاد رکھی پاکستان کو عالمی سامراج کے مذموم مقاصد کی تکمیل کے لیے الہ کار بنا کر رکھ دیا شہید ذوالفقار علی بھٹو جو اسلامی دنیا کا عظیم لیڈر اور پاکستان کی ترقی کا ضامن بن چکا تھا کی زندگی کے خاتمے کی طرف 5 جولائی پہلا قدم تھا جنرل ضیا ء الحق کے اس بدترین اور تاریخ کے سیاہ ترین کارنامے کو پاکستان کی تاریخ میں قوم کسی صورت بھول نہیں پاے گی احمدفراز نے کہاکہ ملک میں کرپشن اقرباء پروری، دہشت گردی اور دیگر جرائم اور تباہ کاریاں اسی اقدام کی وجہ سے ہوئیں جس کا خمیازہ پوری قوم کو پتہ نہیں کب تک بھگتنا پڑے قومیں اپنے ماضی سے سبق سیکھتی ہیں آج بھی وقت ہے کہ ہم ماضی کے واقعات تجربات اور مشاہدات سے سبق لیں تب ہی جا ملک بہتر حالات کی طرف جا سکتا ہے مک مختیارکنہوں‘ظفرخان بلوچ نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اس ملک کے لیے جان کا نذرانہ دے چکے پاکستان پیپلز پارٹی کے سینکڑوں کارکن بھی اپنی جان وطن عزیز کی خاطر نذرانہ کر چکے اب قوم کی ذمہ داری ہے کہ ان قربانیوں کو ضائع ہونے سے بچائیں یہی وقت کی ضرورت اور ملک کے لیے بہتری ہے۔ملک بھر کی طرح کبیروالا شہر میں بھی پیپلز پارٹی نے 5جولائی کے حوالے سے یوم سیاہ منایا گیا۔پیپلز پارٹی کبیروالا سٹی کے صدر چوہدری انیس ناصر گھمن،تحصیل میڈیا کوارڈی نیٹر میاں غلام عباس سہو،سٹی جنرل سیکرٹری ملک محمد اجمل سمیجہ،ملک محمد رمضان،علیم خان،استاد ملک محمد حفیظ،ڈاکٹر محمد افضل تھہیم،مہر عمران حیدر باٹی،رانا منیر اقبال،بابا خان محمد،رانا عظمت علی،،میاں آصف سہو،زبیر احمد،دانش،عباس،عرفان،ذاکر خان،چوہدری انتظار حسین،محمد شفیع،الیاس،مسلم شاہ اور دیگر نے”یوم سیاہ“ کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ5جولائی،پاکستان کی سیاسی تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے،عالمی استعماری طاقتوں کے ایجنڈے کی تکمیل کیلئے منتخب جمہوری حکومت کا خاتمہ کیا گیا،وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو شہید کو سازش کے تحت ہٹایا نہ جاتا تو آج پاکستان کا شمار ترقی یافتہ ممالک میں ہوتاہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی تعمیر وترقی اور عوام کی خوشحالی کا ہر خواب جمہوری حکومتوں کے دور میں شرمندہ تعبیر ہوا،عالمی طاقتوں کے گماشتوں نے قائد عوام اور سابق وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو شہید کی منتخب جمہوری حکومت کا خاتمہ کیا اور انہیں پاکستان کو دنیا کی پہلی اسلامی اٹیمی طاقت بنانے کے جرم میں شہید کراکے وطن عزیز کو ایک محب وطن اور عوام دوست رہنما سے محروم کردیا گیا۔

یوم سیاہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -