وہاڑی: مضر صحت برف گولوں، آئس کریم کی فروخت

وہاڑی: مضر صحت برف گولوں، آئس کریم کی فروخت

  

وہاڑی (بیورورپورٹ،نامہ نگار) وہاڑی شہراورگردونواح ان(بقیہ نمبر32صفحہ6پر)

دنوں برف کے گولے،غیرمعیاری آئس کریم اورغیرمعیاری قلفیاں فروشوں کے نرغہ میں ہیں شہرکے مختلف علاقوں میں گولہ فروشوں اورایسی فیکٹریوں کے مالکان نے بے روزگارنوجوانوں کوروزگارکالالچ دے کرغیرمعیاری برف کے گولے،آئس کریم اورقلفیوں کی فروخت کرنے پرلگارکھافورڈاتھاڑتی سمیت متعلقہ حکام نے مبینہ خاموشی اختیارکررکھی ہے یہ غیرمعیاری اشیاء کھانے والے معصوم بچے اورافرادگلے اورپیٹ کی بیماریوں کاشکاہونے لگے ہیں وہاڑی شہرکے مختلف علاقوں پیپلزکالونی،کالج ٹاؤن،فیصل ٹاؤن،سرہندکالونی،مدینہ کالونی،دانیوال ٹاؤن،مسلم ٹاؤن9،11،مکہ ٹاؤن،بھٹہ شادی خان،27بھٹہ،پل محسن شاہ،24ڈبلیوبی،پپلی اڈہ،48پل،اڈہ پیرمراد،اڈہ چکڑالہ،اڈہ ٹھینگی،ماچھیوال،اڈہ پکھی موڑسمیت دیہی علاقوں میں انسانیت کے دشمنوں نے مضرصحت اورغیرمعیاری آئس کریم اورقلفیاں بنانے کی فیکٹریاں لگاکردھڑلے سے بناکرفروخت کرنے میں مصروف ہیں جبکہ کوروناکی وجہ سے بے روزگارہوجانے والے نوجوان اپنے گھروں کے اخراجات پورے کرنے کیلئے غیرمعیاری آئس کریم اورقلفیاں فروخت کرتے ہوئے سائیکلوں اورموٹرسائیکلوں پرچکوک اوردیگررہائشی علاقوں میں پھیری لگاتے دکھائی دیتے ہیں مضرصحت آئس کریم اورقلفیاں کھانے والے افرادخصوصاًچھوٹے بچے گلے اورپیٹ کی بیماریوں کاشکارہوکرہسپتالوں میں داخل ہورہے ہیں اس صورتحال پرشہری وعوامی حلقوں نے کہاہے کہ فوڈاتھارٹی سمیت دیگرذمہ دارحکام کی مجرمانہ خاموشی قابل تشویش ہے شہری وعوامی حلقوں نے کمشنرملتان اورڈپٹی کمشنرسے صورتحال کانوٹس لینے کامطالبہ کیاہے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -