آمریت کے روپ میں آج بھی سول ڈکٹیٹرشپ قائم ہے، نثار کھوڑو

آمریت کے روپ میں آج بھی سول ڈکٹیٹرشپ قائم ہے، نثار کھوڑو

  

کراچی (سٹاف رپورٹر)پی پی پی سندھ کے صدر نثار احمد کھوڑو نے کہا ہے کے 18ویں ترمیم کی وجہ سے رات کے اندھیرے میں جمہوری حکومتوں کو گھر بھیجنے کا راستہ روک دیا گیا ہے مگر آمریت کے دوسرے روپ میں ملک میں آج بھی سول ڈکٹیٹرشپ قائم ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے 5 جولائی یوم سیاہ کے موقعے پر اپنے جاری ایک بیان میں کیا ہے۔ نثار کھوڑو نے کہا کے عمران خان کی پی ٹی آئی سرکار ملک کو آمرانہ طرز پر چلا رہی ہے اور اس موجودہ آمرانہ طرز حکومت میں عوام سے جینے کا حق بھی چھینا جارہا ہے او اظھار کی آزادی بھی صلب کی جا رہی ہے۔ نثار کھوڑو نے کہا کے 5 جولائی پاکستان کی تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے۔5 جولائی 1977 کو شہید ذوالفقار بھٹو کی منتخب حکومت کا تختہ الٹا کر مارشل لا لگائی گئی۔ آج اس دن پر آمروں کے اس اقدام کی مذمت کرتے ہیں۔نثار کھوڑو نے کہا کے ملک میں حقیقی جمھوری پارلیامانی نظام کا تسلسل ہی مسائل کا حل ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -