سرگودھا میں ٹیچر نے دھوکے سے کالج بلوا کر میڈیکل کی طالبہ کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

سرگودھا میں ٹیچر نے دھوکے سے کالج بلوا کر میڈیکل کی طالبہ کو جنسی زیادتی کا ...
سرگودھا میں ٹیچر نے دھوکے سے کالج بلوا کر میڈیکل کی طالبہ کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

  

سرگودھا(مانیٹرنگ ڈیسک) سرگودھا میں ایک شیطان صفت ٹیچر نے طالبہ کو بہانے سے کالج بلا کر درندگی کا نشانہ بناڈالا۔ ایکسپریس نیوز کے مطابق کورونا وائرس کی وجہ سے سکول اور کالجز بند ہیں چنانچہ اس میڈیکل کی طالبہ کا کالج بھی بند تھا تاہم اسے 25جون 2020ءکو ایک عورت کی فون کال موصول ہوئی جس نے بتایا کہ وہ کالج کی پرنسپل بول رہی ہے۔ اس نے طالبہ سے کہا کہ کالج میں کلاسز شروع ہو چکی ہیں چنانچہ وہ کل کالج پہنچ جائے۔ اگلے روز طالبہ کالج پہنچ گئی مگر کالج خالی تھا۔ طالبہ خالی کالج دیکھ کر واپس جانے لگی تو اندر موجود ٹیچر ایم ارشد نے لڑکی سے کہا کہ وہ اسے گھر ڈراپ کر دے گا۔

رپورٹ کے مطابق لڑکی اس بدطینت پر اعتبار کرکے اس کی گاڑی میں بیٹھ گئی مگر وہ اسے اس کے گھر کی بجائے ایک فلیٹ پر لے گیا اور چار گھنٹے تک جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔ اس جنسی درندے نے طالبہ کی فحش ویڈیو بھی بنا لی اور دھمکی دی کہ اگر اس نے کسی کو بتایا تو وہ یہ ویڈیو وائرل کر دے گا۔ چار گھنٹے بعد وہ اسے کالج کے گیٹ پر چھوڑ کر چلا گیا۔ اس وقت لڑکی نیم بے ہوشی کی حالت میں تھی۔ لڑکی نے ہمت کی اور ٹیچر کی دھمکی سے ڈرنے کی بجائے اپنے گھر والوں کو اپنے ساتھ ہونے والے سلوک کے بارے میں بتا دیا جس پر طالبہ کے والد نے ایم ارشد نامی اس ٹیچر کے خلاف ایف آئی آر درج کروا دی۔ رپورٹ کے مطابق ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -سرگودھا -