وادی گلوان تنازعہ، چینی فوج پیچھے ہٹ گئی، بڑا دعویٰ

وادی گلوان تنازعہ، چینی فوج پیچھے ہٹ گئی، بڑا دعویٰ
وادی گلوان تنازعہ، چینی فوج پیچھے ہٹ گئی، بڑا دعویٰ

  

لیہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) لداخ کی وادی گلوان سے ہندوستان اور چین کی فوجیں ڈیڑھ ڈیڑھ کلومیٹر پیچھے ہٹ گئیں۔

بھارتی  میڈیا نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے  کہ جس وادی گلوان میں چینی اور بھارتی فوج میں جھڑپ ہوئی اور بھارت کے 20 فوجی جوان مارے گئے تھے وہاں سے اب دونوں ملکوں نے اپنی فوجوں کو پیچھے ہٹالیا ہے۔

ذرائع کے مطابق چینی اور بھارتی فوجیں وادی گلوان میں اپنی موجودہ پوزیشنز سے ڈیڑھ کلومیٹر پیچھے ہٹ گئی ہیں۔ دونوں فوجوں کے بیچ آئندہ کسی جھڑپ کا سدباب کرنے کیلئے بیچ کے علاقے کو بفرزون قرار دے دیا گیا۔ فوجیں ہٹانے کے فیصلے کے بعد دونوں ملکوں کی افواج نے اپنے عارضی کیمپ اور تنصیبات ہٹانے کا کام شروع کردیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ فوجوں کے پیچھے ہٹنے کے حوالے سے 6 جون کو کور کمانڈرز سطح کی میٹنگ ہوئی تھی جس کے بعد 30 جون کو تیسری میٹنگ ہوئی اور فوجوں کو پیچھے ہٹانے کا طریقہ کار طے کیا گیا۔

مزید :

Breaking News -بین الاقوامی -