اٹھارویں ترمیم پر بات کرنا صدر کے منصب کے خلاف ہے:اسفند یار ولی

اٹھارویں ترمیم پر بات کرنا صدر کے منصب کے خلاف ہے:اسفند یار ولی
اٹھارویں ترمیم پر بات کرنا صدر کے منصب کے خلاف ہے:اسفند یار ولی

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن )عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی خان نے کہا ہے کہ اٹھارویں ترمیم پر بات کرنا صدر کے منصب کے خلاف ہے۔اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ اٹھارویں ترمیم ملک کی بقا اور یکجہتی کی ضامن ہے، صدر کسی ایک سیاسی جماعت کا نہیں بلکہ پورے ملک کا سربراہ ہوتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جو بھی خود مختاری پر یقین رکھتا ہے وہ اس ترمیم کے خلاف بات نہیں کرے گا،سارے صوبے اس ترمیم سے مطمئن ہیں صدر کو اپنے عہدے کا خود احترام کر لینا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ اگر ان کو شوق ہے تو استعفیٰ دے کر پی ٹی آئی کے پلیٹ فارم سے عملی سیاست میں آجائیں، صدر کو ہر حال میں صوبوں کے مفادات کا خیال رکھنا ہوتا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ صدر کس منہ سے کہہ رہے ہیں کہ اٹھارویں ترمیم پر بات ہو سکتی ہے، میڈیا پر ان کے حوالے سے چلنے والی خبریں افسوس ناک ہیں۔

مزید :

قومی -