”ایشوین جب مجھے گیند کرانے آیا تو میں نے جان بوجھ کر لیگ سائیڈ کی طرف دیکھا تاکہ۔۔۔“ شاہد آفریدی نے ایشیاءکپ میں لگائے گئے تاریخی چھکوں سے متعلق کئی سالوں بعد انکشاف کر دیا

”ایشوین جب مجھے گیند کرانے آیا تو میں نے جان بوجھ کر لیگ سائیڈ کی طرف دیکھا ...
”ایشوین جب مجھے گیند کرانے آیا تو میں نے جان بوجھ کر لیگ سائیڈ کی طرف دیکھا تاکہ۔۔۔“ شاہد آفریدی نے ایشیاءکپ میں لگائے گئے تاریخی چھکوں سے متعلق کئی سالوں بعد انکشاف کر دیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد خان آفریدی نے بھارتی باؤلر ایشون کو لگائے گئے چھکوں کی یاد تازہ کرتے ہوئے کہا کہ ایشون کو کھیلنا مشکل تھا لیکن اس کے باوجود میں اسے دو چھکے لگانے میں کامیاب رہا حالانکہ آخری گیند کھیلنا بہت مشکل تھا۔ 

تفصیلات کے مطابق معروف سپورٹس اینکر زینب عباس نے پاکستان کے سابق سٹار آل راؤنڈر شاہد خان آفریدی سے انٹرویو کے دوران سوال کیا کہ ایشیاءکپ کے فائنل میں بھارت کے خلاف جب آپ بیٹنگ کیلئے گراؤنڈ پر جا رہے تھے تو آپ کے دماغ میں کیا چل رہا تھا؟

شاہد خان آفریدی نے سوال کے جواب میں مسکراتے ہوئے کہا کہ دماغ میں کچھ نہیں چل رہا تھا، اگر کچھ چل رہا ہوتا تو پھر پرفارم نہ کر پاتا۔ جب میں کریز پر آیا تو میں نے سعید اجمل سے کہا کہ بس آپ ایک بال روک کر سنگل کر دو، سوئپ شارٹ نہیں مارنا، لیکن سعید تو میرا بھائی نکلا، اس نے میری بات نہیں مانی اور سوئپ شارٹ کھیل کر آؤٹ ہوگیا۔

آفریدی نے بتایا کہ سعید اجمل کے آؤٹ ہونے کے بعد جب جنید خان کریز پر آئے تو میں نے اس سے کہا کہ بس آپ سیدھے بلے سے گیند روک کر سنگل لو، رن ہر حالت میں لینا ہے جس پر جنید نے کہا کہ شاہد بھائی آپ فکر نہ کرو اور اس طرح میں سنگل لینے میں کامیاب رہا۔

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان کا کہنا تھا کہ جب ایشون مجھے بال کرانے کیلئے سامنے آیا تو میں اپنے لیگ سائیڈ کو دیکھنے لگا تا کہ اسے لگے میں اس طرف شارٹ کھیلوں گا اور وہ مجھے آف سوئنگ نہ کرائے لیگ سپن کرائے اور اس نے ویسے ہی کیا جس پر میں نے اسے چھکا لگایا۔

شاہد آفریدی نے ایشون کی آخری بال سے متعلق کہا کہ وہ بال بہت مشکل تھی اور جب میں نے ہٹ لگائی تو گیند کے باؤنڈری پار جانے تک میں پریشانی کا شکار تھا کہ چھکا ہوگا یا نہیں اور پھر جب بال باؤنڈری پار گئی تو میں نے پھر لمبی سانس لی۔

مزید :

کھیل -