بھارتی ریاست میں ریپ کی کوشش ‘مزاحمت پرخاتون قتل

بھارتی ریاست میں ریپ کی کوشش ‘مزاحمت پرخاتون قتل

  




نئی دہلی (آئی این پی )بھارت کی شمال مشرقی ریاست میگھیالے میں شدت پسندوں نے خاتون سے زیادتی کی کوشش کے دوران مزاحمت پر اسے گولی مار کرقتل کردیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق پولیس حکام کا کہنا ہے کہ شدت پسند تنظیم گارو نیشنل لبریشن آرمی (جی این ایل اے) کے پانچ شدت پسندوں نے خاتون کے شوہر اور بچوں کو ایک کمرے میں بند کردیا تھا۔ انھوں نے اس خاتون کو گھسیٹ کر باہر نکالا اور جنسی زیادتی کی کوشش کی اور مزاحمت کرنے پر خاتون کے سر میں گولی ماری۔پولیس حکام کے مطابق شدت پسندوں کی تلاش کی جا رہی ہے۔’یہ ایک دور دراز علاقہ ہے جہاں پہاڑیاں اور گھنا جنگل ہے۔ ہم نے تفتیش شروع کر دی ہے اور سرچ آپریشن بھی جاری ہے۔حکام کے مطابق یہ واقعہ بنگلہ دیش کی سرحد کے قریب پیش آیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہلاک ہونے والی خاتون کی عمر 35 سال تھی اور وہ چار بچوں کی ماں تھیں۔واضح رہے کہ گارو نیشنل لبریشن آرمی (جی این ایل اے) گارو کی علیحدہ ریاست کے لیے مسلح جدوجہد کر رہے ہیں۔مبصرین کا خیال ہے کہ بھارت میں ریپ کے واقعات کی روک تھام کے لیے قوانین سخت کیے گئے ہیں تاہم اس میں کمی نظر نہیں آ رہی ہے۔واضح رہے کہ دسمبر 2012 میں دارالحکومت دہلی میں ایک چلتی بس میں اجتماعی ریپ کے واقعے میں ایک طالبہ کی موت کے بعد ملک بھر میں زبردست احتجاج کیا گیا تھا اور اسی کے نتیجے میں اس وقت موجود قانون میں مزید سختی کی گئی تھی۔

مزید : عالمی منظر


loading...