روس کے مقابلے پر یوکرین کے ساتھ ہیں، امریکی صدر اوباما

روس کے مقابلے پر یوکرین کے ساتھ ہیں، امریکی صدر اوباما

  



وارسا (این این آئی)امریکہ کے صدر براک اوباما نے کہا ہے ان کا ملک اور عالمی برادری روس کے سیاہ ہتھکنڈوں کے مقابلے پر یوکرین کے ساتھ کھڑے ہیں۔ پولینڈ میں یومِ آزادی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر اوباما نے کہا کہ بڑی طاقتوں کو چھوٹے ممالک پر دھونس جمانے یا بندوق کی نوک پر ان پہ اپنی مرضی تھوپنے کا اختیار نہیں ہونا چاہیے۔صدر اوباما نے یوکرین کے علاقے کرائمیا کے روس کے ساتھ الحاق کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ محض قلم کی جنبش سے کسی پڑوسی ملک کی زمین پر قبضہ جائز قرار نہیں پاتا۔انہوں نے کہا کہ آزاد دنیا کرائمیا پر روس کے قبضے اور یوکرین کی خود مختاری کے خلاف روسی اقدامات کو قبول نہیں کرے گی۔صدر اوباما نے کہا کہ روسی اقدامات کے مقابلے پر دنیا کے آزاد ممالک متحد ہیں اور اگر روس کی اشتعال انگیزیاں جاری رہیں تو اس کے نتیجے میں ماسکو حکومت ہی کی تنہائی اور مشکلات میں اضافہ ہوگا۔امریکی صدر نے کہاکہ قوموں اور ملکوں کو اپنی منزل کے اختیار کا حق حاصل ہے اور یوکرین کے لوگوں سے یہ حق کوئی نہیں چھین سکتا۔

انہوں نے کہا کہ دنیا کو ہر صورت ان افراد کے شانہ بشانہ کھڑا ہونا ہوگا جو آزادی کی تلاش میں سرگرم ہیں۔نیٹو اتحادیوں کےساتھ امریکہ کی وابستگی کا اظہار کرتے ہوئے صدر اوباما نے کہا کہ نیٹو' ممالک متحد ہیں اور ان میں سے کسی ایک پر بھی حملہ سب پر حملہ تصور ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ نیٹو کے رکن ممالک کی آزادی، امریکہ کی آزادی کےمترادف ہے جس کا ہر قیمت پر تحفظ کیا جائےگا۔

مزید : عالمی منظر