مقبوضہ کشمیر ‘، جعلی مجاہدین کر لوگوں سے رقومات اکٹھی کرنےوالا پولیس اہلکار گرفتار

مقبوضہ کشمیر ‘، جعلی مجاہدین کر لوگوں سے رقومات اکٹھی کرنےوالا پولیس اہلکار ...

  



 سرینگر(آن لائن) مقبوضہ کشمیر میں جعلی مجاہد بن کر لوگوں سے رقومات اکھٹنے کرنے کی کوشش کرنے والے ٹاسک فورس کے ایک اہلکار کو لوگوں نے پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا جبکہ دوسرا فرار ہوگیا ۔ صوبہ پولیس نے گرفتار اہلکار اور اس کے ساتھی کیخلاف کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہیں جس کے دوران یہ انکشاف ہوا ہے کہ گرفتار ایس او جی اہلکار مبینہ طور پر وانی خاندان سے ماہانہ بیس سے پچیس ہزار روپے بطور تاوان وصول کیا کرتا تھا عثمان آباد عمر ہیر بڑھ پورہ میں شہریوں کے شدید احتجاج کے باعث کئی گھنٹوں تک سرینگر گاندر بل اور سرینگر کرکگل روڈ پر ٹریفک کی آمدورفت مسدود رہی تاہم اعلیٰ افسران کی یقین دہانی پر لوگوں نے پرامن طور پر اپنا احتجاج ختم کیا سرینگر گاندر بل شاہراہ پر نوے فٹ روڈ کے متصل رہائشی علاقہ عثمان آباد عمر ہیر بڑھ پورہ میں گئے اس وقت خوف و دہشت اور ناراضگی کی لہر دوڑ گئی جب مبینہ طورپر ٹاسک فورس اہلکاروں نے رات کے ساڑھے نو بجے حاجی غلام محمد وانی ولد محمد سلطان کے گھر میں داخل ہوکر خود کو جیش محمد سے وابستہ جنگجو بتا کر بندوق کی نوک پر اہل خانہ سے رقومات کا تقاضا کیا حاجی غلام ممد وانی اور ان کے اہلخانہ نے کمال جرات مندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے بندوق برداروں کی مانگ کو یکسر ٹھکرا دیا جس پر طرفین کے مابین تلخ کلامی کے بعد ہاتھا پائی بھی ہوئی نکلی جنگجوﺅں اور اہل خانہ کے مابین ہوئی لڑائی کے دوران ایک بندوق بردار کی رائفل سے گولی نکل کر سیدھے اس کے پاﺅں پر جا لگی جس کے نتیجے میں وہ زخمی ہوکر وہیں گر پڑا جبکہ اس دوران اس کا دوسرا ساتھی رات کی تاریکی کا فائدہ اٹھا کر جائے واردات سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا ۔

مزید : عالمی منظر


loading...