سرکاری ملازمین کیلئے تربیتی ورکشاپ سود مند ثابت ہوتی ہے،ڈاکٹر پرویز احمد

سرکاری ملازمین کیلئے تربیتی ورکشاپ سود مند ثابت ہوتی ہے،ڈاکٹر پرویز احمد

  



لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)سرکاری افسروں اور اہل کاروں کی استعداد کار بڑھانے کیلئے منعقد کیے جانے والے تربیتی پروگرام، سیمینارز اور ورکشاپس سے اُسی صورت میں مثبت نتائج حاصل کیے جا سکتے ہیں جب سرکاری شعبے سے باس اور ماتحت کا تصور ختم ہو اور ایک سرکاری ملازم اپنے رویوں میں مثبت تبدیلی لا کر خود کو بہترین \"پبلک سرونٹ\"ثابت کر سکے ان خیالات کا اظہار حکومتِ پنجاب کے محکمہ خواندگی اور مینجمنٹ پروفیشنل ڈویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ (MPDD)کے سیکرٹری ڈاکٹر پرویز احمد خان نے ایم پی ڈی ڈی کا اضافی چارج سنبھالنے کے بعد محکمہ کے ایڈیشنل سیکرٹری کی طرف سے دیئے گئے بریفنگ سیشن سے خطاب کے دوران کیا ڈاکٹر پرویز احمد خان نے کہا کہ سرکاری ملازمین کیلئے وہی تربیت سود مند ثابت ہوتی ہے جسے مکمل کرنے کے بعد سرکار ی اُ مور میں \"عمدہ سروس ڈیلیوری\"کا پہلو پایا جا تا ہو اُنہوں نے کہا کہ محکمہ ایم پی ڈی ڈی میں جاری محکمانہ کورسز و تربیت کے معیار کو مزید بہتر اور پائیدار بنانے کیلئے تجربہ کار اور محنتی انسٹرکٹرز اور فیکلٹی ممبران ناگزیر ہیں سیکرٹری خواندگی و ایم پی ڈی ڈی نے ہدایت کی کہ تربیت سے پہلے اور بعد کے فیڈ بیک، ریسرچ اور مطالعے کے کلچر کو فروغ دینے کیلئے کوششوں کو تیز کیا جائے۔ اس موقع پر سیکرٹری سے محکمہ ایم پی ڈی ڈی کے سینئر افسران کا تعارف بھی کرایا گیا ۔ایڈیشنل سیکرٹری لٹریسی ندیم عالم بٹ اور دیگر متعلقہ افسران بھی اجلاس میں موجود تھے۔محکمہ کے ایڈیشنل سیکرٹری عمر فاروق علوی نے بریفنگ کے دوران بتایا کہ ایم پی ڈی ڈی نے 2005سے2013تک پنجاب کے 3882سرکاری افسران و اہل کاروں کو 30,40تربیتی دنوں کے دوران پبلک سیکٹر ، مینجمنٹ، گورننس،پالیسی پلاننگ و عمل درآمد، ہیومن ریسورسس مینجمنٹ، لینڈ ریونیو انتظامات سٹریٹیجک مینجمنٹ، قوانین، سروس رولز، سماجی، سیاسی و مالیاتی نظام، سول و کریمنل لاز اور دیگر متعلقہ شعبوں کے حوالے سے 103کورسز کرائے ۔ علاوہ ازیں قومی و عالمی تقاضوں سے ہم آہنگ جدید کورسز بھی کرائے جا رہے ہیں جبکہ معلومات افزا ورکشاپس اور سیمینارز اس کے علاوہ ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4