جمعبندیوں کی تکمیل میں تاخیر، ملوث ریونیو سٹاف کے خلاف تاحال کارروائی نہ کی جا سکی

جمعبندیوں کی تکمیل میں تاخیر، ملوث ریونیو سٹاف کے خلاف تاحال کارروائی نہ کی ...

  



لاہور (عامر بٹ سے) جمعبندیوں کی تکمیل تاخیر اور کلئیرنس میں ملوث رشوت خور، ریونیو سٹاف کے خلاف تاحال کوئی قانونی کارروائی نہ کی جا سکی ڈی سی او لاہور کی جانب سے مانیٹرنگ کیلئے تشکیل کردہ ٹیمیں بھی سست روی کا شکار ہو گئی اعلیٰ افسران کے سامنے رشوت خور لابی کو بے نقاب کرنے کے منتظر پٹواری، اعلیٰ افسران کے گرین سگنل کا انتظار کرتے ہوئے دیکھائی دئیے لابی نے چند روز خاموش رہنے کے بعد پھر سے اپنی پریکٹس شروع کر دی ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر ریونیو عرفان میمن سے دوبارہ نوٹس لینے کی اپیل کی گئی ہے روزنامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات کے مطابق صوبائی دارلحکومت لاہور میں جمعبندیوں کی تکمیل، تاخیر اور کلئیرنس سرٹیفکیٹ جاری کرنے کے عوض پٹواریوں سے لاکھوں کی رشوت وصولی کا کام سرانجام دینے اور ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر ریونیو سمیت ڈی سی او لاہور کا نام استعمال کرتے ہوئے لوٹ مار کرنے والی مخصوص کرپٹ لابھی تاحال کسی بھی قسم کی قانونی کارروائی کی نہ تو زد میں آ سکی ہے اور نہ ہی کسی مانیٹرنگ ٹیم کے سامنے عیاں ہو سکی ہے اس ضمن میں ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر عرفان میمن نے سخت نوٹس لیا تھا تاہم اس نوٹس کا اثر متعلقہ لابی پر تاحال نہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں رشوت وصولی کی پریکٹس چند دن بند رہنے کے بعد دوبارہ شروع ہو چکی ہے اور اس مخصوص لابی کے زیر عتاب پٹواریوں کی بڑی تعداد پھر سے غیر قانونی پریکٹس شروع ہو جانے پر شدید پریشان ہے روزنامہ پاکستان کو نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر پٹواریوں نے آگاہی دی ہے کہ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر عرفان میمن اگر اربن کے موضع جات میں تعینات پٹواریوں کو بلوا کر باوضو حلف لیتے تو ان کو بتا دیا جاتا کہ وہ کونسا سٹاف ہے جو کہ اعلیٰ افسران کے نام پر بلیک میل کرتے ہوئے پیسے کما رہا ہے ہماری اپیل ہے کہ اس اس ایشو پر ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر از خود نوٹس لیتے ہوئے مانیٹرنگ کریں اور اس مخصوص لابی سے چھٹکارا دلائیں .جو کہ محکمہ کی بدنامی کے ساتھ ساتھ اعلیٰ افسران کے نام بھی استعمال کر رہی ہے

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...