ملتان کو بگ سٹی قرار دے دیا گیا ،میٹرو بس منصوبے کی منظوری

ملتان کو بگ سٹی قرار دے دیا گیا ،میٹرو بس منصوبے کی منظوری

  



                                         لاہور(جنرل رپورٹر)وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے ملتان شہر کے لئے 30کلومیٹر طویل میٹروبس منصوبے کی منظوری دے دی ہے جس کا سنگ بنےاد چودہ اگست کو رکھا جائے گا اور منصوبہ اےک سال کی رےکارڈ مدت مےں مکمل ہو گا جس پر 30ارب روپے سے زائد کی لاگت آئے گی اور ملتان میٹر و بس منصوبہ کو دبئی مےٹروبس پراجےکٹ کی جدےدطرزپر تعمیرکےاجائے گا ۔ وزیر اعلیٰ کوسرکٹ ہاو¿س ملتان مےں منعقدہ اعلی سطح کے اجلاس کے دوران میٹرو بس کے لئے 2ممکنہ روٹس کے بارے مےں بریفنگ دی گئی اور انہوں نے دونوں روٹس پر میٹرو بس منصوبہ تعمیر کرنے کی ہدایت کی۔ایک سال میں مکمل ہونے والے اس منصوبہ سے روزانہ ڈےڑھ لاکھ سے زائد مسافر استفادہ کر سکیں گے اورمےٹروبس پراجےکٹ سے ملتان کا پورا شہرمستفےد ہوگا ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے ملتان کو بگ سٹی قرار دینے کا بھی باقاعدہ اعلان کیا۔اس موقع پر انہوں نے کہا کہ میٹرو بس ملتان کے عوام کے لئے ایک تحفہ ہے جس سے نہ صرف ملتان میں ترقی کا ایک نیا دور شروع ہوگا بلکہ اربوں روپے کی سرمایہ کاری ہونے سے روزگار کے مواقع بھی میسر آئیں گے۔ میٹرو بس شہر کی خوبصورتی میں اضافہ کرے گی اور ملازمین ،طلبائ، مزدور، اساتذہ،وکلائ،ڈاکٹرزاور خواتین کو سستی اورمعےاری سفری سہولیات میسر ہوں گی۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ جولائی میں مکمل پی سی ون تیار ہوجائے گاا ور انشاءاللہ 14اگست کو ملتان میٹرو بس کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا۔ ایک سال کی ریکارڈ مدت میں مکمل ہونے والا یہ منصوبہ پچھلے دورِ حکومت کے دوران ملتان میں بننے والے منصوبوں سے مختلف ہوگا اور اس میں وہ شفافیت ہوگی جو سب کو نظر آئے گی۔جولائی میں منصوبے کی فزیبلٹی رپورٹ مکمل ہوگی جس کے فوری بعد کام کا آغاز کر دیا جائے گا۔میٹرو بس کے روٹ پر بننے والے فلائی اوورز کے نیچے جدید لینڈ سکیپنگ کی جائے گی اور ملتان کے رواےتی کلچر کے مطابق تزئےن و آرائش کی جائے کی جس سے شہر کے حسن میں اضافہ ہوگا۔انہوں نے ارکان قومی و صوبائی اسمبلی کو ہدایت کی کہ اپنے اپنے حلقہ سے گزرنے والے میٹر و بس کے روٹ پر کام کی خود نگرانی کریں ‘جس عوامی نمائندے کی کارکردگی سب سے بہتر ہوگی اس کے لئے میں وزیر اعظم سے تمغہ امتیاز کی سفارش کروں گا۔ میٹرو بس سے روٹ کے قُرب و جوارکی آبادیوں کو اس منصوبے سے مستفید کرنے کے لئے مختلف میٹروسٹیشنوں تک فیڈر بسیں چلائی جائیں گی۔فیڈر بسوں کو بھی مرکزی منصوبہ کے ساتھ ہی شروع کیا جائے گا۔ملتان میٹروبس کے حوالے سے وزیر اعلیٰ پنجاب نے دو ارکان قومی اسمبلی اور تین ارکان صوبائی اسمبلی پر مشتمل کمیٹی بنانے کا بھی اعلان کیا جو میٹرو بس کے حوالے سے مختلف معاملات کو دیکھے گی۔شہباز شریف نے کہا کہ میٹرو بس کے راستے میں جو پہلے سے تعمیر شدہ فلائی اوور آئیں گے ان کو بھی کشادہ کیا جائے تاہم کشادگی کے وقت اس بات کا خاص خیا ل رکھا جائے کہ سابقہ فلائی اوورز کی مضبوطی متاثر نہ ہو کیونکہ ماضی میں تعمیر کردہ فلائی اوورز کے معیار تعمیر کے بارے مےں خدشات سننے میں آتے رہے ہیں ۔ وزےراعلیٰ محمد شہباز شرےف نے مےٹروبس پراجےکٹ کے مجوزہ روٹس کا معائنہ کےا۔وزیر اعلیٰ نے امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لےنے کے متعلق اجلاس کے دوران پنجاب پولیس کے تمام ڈویژنل اور ضلعی افسران کو ہدایت کی کہ وہ عوامی نمائندوں کے ساتھ مل کر امن وامان کی صورتحال کو بہتر بنانے کے حوالے سے ہر ماہ باقاعدگی سے اجلاس منعقد کریں اور اس میں پیش کی جانے والی مثبت تجاویزپر عمل کےا جائے۔انہوں نے کہا کہ میں پہلے بھی اس امر کی ہدایت کرچکا ہوں تاہم اب پولیس کا جو ضلعی یا ڈویژنل افسر ماہانہ اجلاس نہیں کرے گا اس کو پنجاب بدر کردےا جائے گا۔ انہوںنے کہا کہ میں آر پی او ،سی سی پی او اور ڈی پی اوز پوری جانچ پڑتال کے بعد خود تعینات کرتا ہوں،ان میں سے 95فی صد کا انتخاب درست ثابت ہوتا ہے تاہم کوئی ایک آدھ بعد میں اس قابل ثابت نہیں ہوتا مگر میں حیران ہو ں کہ اچھے افسران کی تعیناتی کے باوجود پولیس کے سسٹم میں تبدیلی نہیں آرہی اور تھانے کی سطح کا عملہ اپنا قبلہ درست نہیں کر رہا ۔یہ پولیس افسران کے لئے لمحہ فکریہ ہے۔وزیر اعلیٰ پنجاب نے اغوا برائے تاوان کی وارداتوں کا نوٹس لیتے ہوئے ان کی روک تھام کے لئے سختی سے ہدایت کی ۔ملتان کے دور ے کے بعد وزےراعلیٰ مظفرگڑھ گئے اورطےب اردگان ہسپتال مےں اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کی جس مےں مختلف ترقےاتی منصوبوں کاجائزہ لےا گےا۔اس موقع پر وزےراعلیٰ نے کہا کہ جنوبی پنجاب مےں ترقےاتی منصوبے ترجےحی بنےادوں پر مکمل کےے جارہے ہےں۔ان علاقوں مےں صحت اور تعلیم کی جدید سہولیات فراہم کر کے لوگوں کا احساس محرومی ختم کیا جائے گا۔جنوبی پنجاب کی ترقی کے لئے عوام کی توقعات سے بڑھ وسائل فراہم کےے گئے ہےں۔اس موقع پر وزےراعلیٰ نے مظفرگڑھ مےں طیب اردگان ہسپتال کو 500بستروں پر مشتمل ہسپتال بنانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اسٹےٹ آف دی آرٹ اس ہسپتال مےں کراچی ،لاہور اور ملتان سے مریض علاج معالجہ کےلئے آئےں گے۔ طیب اردگان ہسپتال اسی ماہ ہسپتال آپرےشنل ہوجائے گا اور مرےضوں کو تمام طبی سہولےات مفت فراہم کی جائےں گی۔ ترکی کے ڈاکٹرز اور دیگر سٹاف ایک سال تک ہسپتال میں اپنی خدمات سرانجام دے گا۔ امسال بجٹ میں ہسپتال کی توسیع پر کام شروع ہوجائے گا اس کےلئے 2ارب روپے مختص کئے جائیں گے،ہسپتال میں بین الاقوامی معیار کی سہولیات دستیاب ہونگی، ہسپتال میں علاج کے لئے کوئی فیس ہوگی نہ کوئی پرچی، تمام نظام کو کمپیوٹرائزڈ بنایا گیا ہے۔ ہسپتال کو ملک کا ماڈل تدریسی ہسپتال بنایا جائے گا۔انہوں نے کہاکہ امےنہ اردگان گرلز سکول کا معیار کراچی گرائمر ایجوکیشن سکول کے معیار کے مطابق ہوگا۔ وزیر اعلیٰ نے امےنہ اردگان دانش کیئر گرلز ہائی سکول کو گیس فراہم کرنے کی منظوری بھی دیتے ہوئے کہاکہ اس منصوبے پر 4کروڑ 40لاکھ روپے لاگت آئے گی۔انہوںنے ہدایت کی کہ سکول میں جنریٹرز کی بجائے سولر پینل سسٹم لگائے جائیںتاکہ طالبات کو بلا تعطل بجلی کی فراہمی کو یقینی بنایاجا سکے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ امسال بجٹ میں اسی طرز پر لڑکوں کےلئے بھی سکول بنایا جائے گاجس کےلئے فنڈز مختص کئے جائیںگے۔انہوںنے ہدایت کی کہ مظفرگڑھ شہر سے ہسپتال اور سکول تک خصوصی طور پر ٹرانسپورٹ چلائی جائے۔انہوں نے ترکش ماڈل ویلیج میں 50مکانوںکو ہسپتال کے ڈاکٹروں اور دیگر سٹاف کے لئے مختص کرنے کی ہدایت کی۔انہوںنے کہا کہ ترکش ڈاکٹروں اور دیگر سٹاف کی سیکورٹی کے فول پروف انتظامات کئے جائیں، سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جائیں۔ سیکرٹری تعلیم عبدالجبار شاہین نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ امےنہ اردگان دانش کیئر گرلز سکول کو دانش سکول اتھارٹی اور کیئر فاﺅنڈیشن چلائیں گے۔ابتدائی طور پر نرسری اور ششم کلاس کا اجراءکیا جائے گا جو امسال ستمبر سے شروع کردی جائیں گی۔ایک طالبہ پر اوسط خرچ 10ہزار روپے سے15ہزار روپے ماہانہ ہوگا، طالبات کو یونیفارم سمیت تمام سہولیات مفت فراہم کی جائےں گی۔اجلاس میں مقامی ایم پی اے حماد نواز ٹیپو نے مظفرگڑھ میں بہاﺅ الدین زکریا یونیورسٹی کا کیمپس بنانے کی تجویز دی جس پر وزیر اعلیٰ نے انتظامیہ کو اس سلسلے میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی۔ وزیر اعلیٰ نے ہسپتال کے کمپیوٹرائزڈ نظام کا معائنہ بھی کیا۔

ملتان کو بگ سٹی قرار دے دیا گیا ،میٹرو بس منصوبے کی منظوری                                             لاہور(جنرل رپورٹر)وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے ملتان شہر کے لئے 30کلومیٹر طویل میٹروبس منصوبے کی منظوری دے دی ہے جس کا سنگ بنےاد چودہ اگست کو رکھا جائے گا اور منصوبہ اےک سال کی رےکارڈ مدت مےں مکمل ہو گا جس پر 30ارب روپے سے زائد کی لاگت آئے گی اور ملتان میٹر و بس منصوبہ کو دبئی مےٹروبس پراجےکٹ کی جدےدطرزپر تعمیرکےاجائے گا ۔ وزیر اعلیٰ کوسرکٹ ہاو¿س ملتان مےں منعقدہ اعلی سطح کے اجلاس کے دوران میٹرو بس کے لئے 2ممکنہ روٹس کے بارے مےں بریفنگ دی گئی اور انہوں نے دونوں روٹس پر میٹرو بس منصوبہ تعمیر کرنے کی ہدایت کی۔ایک سال میں مکمل ہونے والے اس منصوبہ سے روزانہ ڈےڑھ لاکھ سے زائد مسافر استفادہ کر سکیں گے اورمےٹروبس پراجےکٹ سے ملتان کا پورا شہرمستفےد ہوگا ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے ملتان کو بگ سٹی قرار دینے کا بھی باقاعدہ اعلان کیا۔اس موقع پر انہوں نے کہا کہ میٹرو بس ملتان کے عوام کے لئے ایک تحفہ ہے جس سے نہ صرف ملتان میں ترقی کا ایک نیا دور شروع ہوگا بلکہ اربوں روپے کی سرمایہ کاری ہونے سے روزگار کے مواقع بھی میسر آئیں گے۔ میٹرو بس شہر کی خوبصورتی میں اضافہ کرے گی اور ملازمین ،طلبائ، مزدور، اساتذہ،وکلائ،ڈاکٹرزاور خواتین کو سستی اورمعےاری سفری سہولیات میسر ہوں گی۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ جولائی میں مکمل پی سی ون تیار ہوجائے گاا ور انشاءاللہ 14اگست کو ملتان میٹرو بس کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا۔ ایک سال کی ریکارڈ مدت میں مکمل ہونے والا یہ منصوبہ پچھلے دورِ حکومت کے دوران ملتان میں بننے والے منصوبوں سے مختلف ہوگا اور اس میں وہ شفافیت ہوگی جو سب کو نظر آئے گی۔جولائی میں منصوبے کی فزیبلٹی رپورٹ مکمل ہوگی جس کے فوری بعد کام کا آغاز کر دیا جائے گا۔میٹرو بس کے روٹ پر بننے والے فلائی اوورز کے نیچے جدید لینڈ سکیپنگ کی جائے گی اور ملتان کے رواےتی کلچر کے مطابق تزئےن و آرائش کی جائے کی جس سے شہر کے حسن میں اضافہ ہوگا۔انہوں نے ارکان قومی و صوبائی اسمبلی کو ہدایت کی کہ اپنے اپنے حلقہ سے گزرنے والے میٹر و بس کے روٹ پر کام کی خود نگرانی کریں ‘جس عوامی نمائندے کی کارکردگی سب سے بہتر ہوگی اس کے لئے میں وزیر اعظم سے تمغہ امتیاز کی سفارش کروں گا۔ میٹرو بس سے روٹ کے قُرب و جوارکی آبادیوں کو اس منصوبے سے مستفید کرنے کے لئے مختلف میٹروسٹیشنوں تک فیڈر بسیں چلائی جائیں گی۔فیڈر بسوں کو بھی مرکزی منصوبہ کے ساتھ ہی شروع کیا جائے گا۔ملتان میٹروبس کے حوالے سے وزیر اعلیٰ پنجاب نے دو ارکان قومی اسمبلی اور تین ارکان صوبائی اسمبلی پر مشتمل کمیٹی بنانے کا بھی اعلان کیا جو میٹرو بس کے حوالے سے مختلف معاملات کو دیکھے گی۔شہباز شریف نے کہا کہ میٹرو بس کے راستے میں جو پہلے سے تعمیر شدہ فلائی اوور آئیں گے ان کو بھی کشادہ کیا جائے تاہم کشادگی کے وقت اس بات کا خاص خیا ل رکھا جائے کہ سابقہ فلائی اوورز کی مضبوطی متاثر نہ ہو کیونکہ ماضی میں تعمیر کردہ فلائی اوورز کے معیار تعمیر کے بارے مےں خدشات سننے میں آتے رہے ہیں ۔ وزےراعلیٰ محمد شہباز شرےف نے مےٹروبس پراجےکٹ کے مجوزہ روٹس کا معائنہ کےا۔وزیر اعلیٰ نے امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لےنے کے متعلق اجلاس کے دوران پنجاب پولیس کے تمام ڈویژنل اور ضلعی افسران کو ہدایت کی کہ وہ عوامی نمائندوں کے ساتھ مل کر امن وامان کی صورتحال کو بہتر بنانے کے حوالے سے ہر ماہ باقاعدگی سے اجلاس منعقد کریں اور اس میں پیش کی جانے والی مثبت تجاویزپر عمل کےا جائے۔انہوں نے کہا کہ میں پہلے بھی اس امر کی ہدایت کرچکا ہوں تاہم اب پولیس کا جو ضلعی یا ڈویژنل افسر ماہانہ اجلاس نہیں کرے گا اس کو پنجاب بدر کردےا جائے گا۔ انہوںنے کہا کہ میں آر پی او ،سی سی پی او اور ڈی پی اوز پوری جانچ پڑتال کے بعد خود تعینات کرتا ہوں،ان میں سے 95فی صد کا انتخاب درست ثابت ہوتا ہے تاہم کوئی ایک آدھ بعد میں اس قابل ثابت نہیں ہوتا مگر میں حیران ہو ں کہ اچھے افسران کی تعیناتی کے باوجود پولیس کے سسٹم میں تبدیلی نہیں آرہی اور تھانے کی سطح کا عملہ اپنا قبلہ درست نہیں کر رہا ۔یہ پولیس افسران کے لئے لمحہ فکریہ ہے۔وزیر اعلیٰ پنجاب نے اغوا برائے تاوان کی وارداتوں کا نوٹس لیتے ہوئے ان کی روک تھام کے لئے سختی سے ہدایت کی ۔ملتان کے دور ے کے بعد وزےراعلیٰ مظفرگڑھ گئے اورطےب اردگان ہسپتال مےں اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کی جس مےں مختلف ترقےاتی منصوبوں کاجائزہ لےا گےا۔اس موقع پر وزےراعلیٰ نے کہا کہ جنوبی پنجاب مےں ترقےاتی منصوبے ترجےحی بنےادوں پر مکمل کےے جارہے ہےں۔ان علاقوں مےں صحت اور تعلیم کی جدید سہولیات فراہم کر کے لوگوں کا احساس محرومی ختم کیا جائے گا۔جنوبی پنجاب کی ترقی کے لئے عوام کی توقعات سے بڑھ وسائل فراہم کےے گئے ہےں۔اس موقع پر وزےراعلیٰ نے مظفرگڑھ مےں طیب اردگان ہسپتال کو 500بستروں پر مشتمل ہسپتال بنانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اسٹےٹ آف دی آرٹ اس ہسپتال مےں کراچی ،لاہور اور ملتان سے مریض علاج معالجہ کےلئے آئےں گے۔ طیب اردگان ہسپتال اسی ماہ ہسپتال آپرےشنل ہوجائے گا اور مرےضوں کو تمام طبی سہولےات مفت فراہم کی جائےں گی۔ ترکی کے ڈاکٹرز اور دیگر سٹاف ایک سال تک ہسپتال میں اپنی خدمات سرانجام دے گا۔ امسال بجٹ میں ہسپتال کی توسیع پر کام شروع ہوجائے گا اس کےلئے 2ارب روپے مختص کئے جائیں گے،ہسپتال میں بین الاقوامی معیار کی سہولیات دستیاب ہونگی، ہسپتال میں علاج کے لئے کوئی فیس ہوگی نہ کوئی پرچی، تمام نظام کو کمپیوٹرائزڈ بنایا گیا ہے۔ ہسپتال کو ملک کا ماڈل تدریسی ہسپتال بنایا جائے گا۔انہوں نے کہاکہ امےنہ اردگان گرلز سکول کا معیار کراچی گرائمر ایجوکیشن سکول کے معیار کے مطابق ہوگا۔ وزیر اعلیٰ نے امےنہ اردگان دانش کیئر گرلز ہائی سکول کو گیس فراہم کرنے کی منظوری بھی دیتے ہوئے کہاکہ اس منصوبے پر 4کروڑ 40لاکھ روپے لاگت آئے گی۔انہوںنے ہدایت کی کہ سکول میں جنریٹرز کی بجائے سولر پینل سسٹم لگائے جائیںتاکہ طالبات کو بلا تعطل بجلی کی فراہمی کو یقینی بنایاجا سکے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ امسال بجٹ میں اسی طرز پر لڑکوں کےلئے بھی سکول بنایا جائے گاجس کےلئے فنڈز مختص کئے جائیںگے۔انہوںنے ہدایت کی کہ مظفرگڑھ شہر سے ہسپتال اور سکول تک خصوصی طور پر ٹرانسپورٹ چلائی جائے۔انہوں نے ترکش ماڈل ویلیج میں 50مکانوںکو ہسپتال کے ڈاکٹروں اور دیگر سٹاف کے لئے مختص کرنے کی ہدایت کی۔انہوںنے کہا کہ ترکش ڈاکٹروں اور دیگر سٹاف کی سیکورٹی کے فول پروف انتظامات کئے جائیں، سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جائیں۔ سیکرٹری تعلیم عبدالجبار شاہین نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ امےنہ اردگان دانش کیئر گرلز سکول کو دانش سکول اتھارٹی اور کیئر فاﺅنڈیشن چلائیں گے۔ابتدائی طور پر نرسری اور ششم کلاس کا اجراءکیا جائے گا جو امسال ستمبر سے شروع کردی جائیں گی۔ایک طالبہ پر اوسط خرچ 10ہزار روپے سے15ہزار روپے ماہانہ ہوگا، طالبات کو یونیفارم سمیت تمام سہولیات مفت فراہم کی جائےں گی۔اجلاس میں مقامی ایم پی اے حماد نواز ٹیپو نے مظفرگڑھ میں بہاﺅ الدین زکریا یونیورسٹی کا کیمپس بنانے کی تجویز دی جس پر وزیر اعلیٰ نے انتظامیہ کو اس سلسلے میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی۔ وزیر اعلیٰ نے ہسپتال کے کمپیوٹرائزڈ نظام کا معائنہ بھی کیا۔

مزید : صفحہ اول


loading...