شہروں میں 14گھنٹے ،دیہاتو ں میں 18گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ

شہروں میں 14گھنٹے ،دیہاتو ں میں 18گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ

  



                                                لاہور(کامرس رپورٹر)ملک میں گزشتہ روز بھی بد ترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا جس سے شدید گرمی میں بار بار لوڈ شیڈنگ نے لوگوں کے لئے زندگی عذاب کر دی رات کے لئے لوگوں کے لئے دو گھنٹے کی نیند بھی خواب بن گئی ۔ بدترین لوڈ شیڈنگ کے باعث معمولات زندگی بری طرح متاثر ہوئے جن دفاتر میں متبادل بجلی کا انتظام نہیں تھا وہاں ملازمین نے سارا وقت دفاتر سے باہر گزرا جس کے باعث سائلوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔ بار بار لوڈ شیڈنگ سے اکثر علاقوں میں پانی کی بھی قلت رہی لوگ ایک دوسرے گھروں سے پانی مانگتے رہے بچے پانی نہ ملنے کی وجہ سے بلکتے رہے ۔ گزشتہ روز بڑے شہروں میں چودہ گھنٹے اور دیہی علاقوں میں بیس گھٹنے تک کی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔مرمت کے نام پر بھی تمام سب ڈویژنوں میں ایک ایک فیڈر چھ سے اٹھ گھنٹے تک کے لئے بند رکھا گیا ۔ شام کے بعد لوڈ بڑھنے پر لیسکو سمیت دیگر سب ڈویژنوں نے اپنا سسٹم بچانے کے لئے کئی گرڈ بند کر دیئے جس سے ان علاقوں میں دو سے تین گھنٹے تک بجلی کی بندش رہی ۔ لوڈ بڑھنے پر کئی سب ڈویژنوں میں ٹرانسفارمر جل گئے سب ڈویژنوں میں متبادل ٹرانسفارمرز کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے جن سب ڈویژنوں میں دو سے زائد ٹرانسفارمر جلے وہاں کے ایس ڈی اوز دوسری سب ڈویژنوں سے ٹرانسفارمر مانگتے رہے جس ایس ڈی اوز کو ٹرانسفارمر مل گئے انہوںنے جلے ٹرانسفارمر تبدیل کر دیئے جن کو نہیں مل سکے ان سب ڈویژنوں میں جلے ٹرانسفارمر والے علاقوں میں لوگوں نے ساری رات گرمی میں اندھیرے میں گزاری انرجی مینجمنٹ سیل کے ذرائع کے مطابق گزشتہ روز بجلی کی مجموعی ڈیمانڈ 17660 میگا واٹ جبکہ پیداوار 11440 میگا واٹ رہی طلب و رسد میں 6220 میگا واٹ کا فرق رہا ۔

لوڈشیڈنگ

مزید : صفحہ اول


loading...