مشرف کی ایمرجنسی :شوکت عزیز کابینہ کے اجلاس کے منٹس منظر عام پر آگئے

مشرف کی ایمرجنسی :شوکت عزیز کابینہ کے اجلاس کے منٹس منظر عام پر آگئے
مشرف کی ایمرجنسی :شوکت عزیز کابینہ کے اجلاس کے منٹس منظر عام پر آگئے

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پرویز مشرف کی ایمرجنسی کے سلسلے میں اُس وقت کی شوکت عزیزکابینہ کے چھ نومبر کے اجلاس کے منٹس سے متعلق نئے حقائق منظر عام پرآگئے ہیں جس کے مطابق اُس وقت کے آرمی چیف پرویز مشرف کی طرف سے تین نومبر 2007ءکی ایمرجنسی کے اقدام کی شوکت عزیز کابینہ نے تین دن بعد توثیق کردی تھی ۔غداری کیس کی سماعت کرنیوالی خصوصی عدالت میں جمع کرائی گئی دستاویز ات کے مطابق چھ نومبر 2007ءکے کابینہ اجلاس میں اس وقت کے وزیراعظم شوکت عزیز نے ارکان کوایمرجنسی کے نفاذ پر اعتمادمیں لیا اورکسی رکن نے اعتراض نہیں کیا ، اگر کیا تو اس کا رپورٹ میں کہیں ذکرموجود نہیں ۔نجی ٹی وی چینل نے دستاویزات کاحوالہ دیتے ہوئے کہاکہ شوکت عزیز اجلاس کے آخری سیشن میں ”عوامی اہمیت کے معاملات“ کے عنوان سے معاملہ سامنے لائے تھے ۔ وزراءکو بتایاگیاکہ ملک میں امن وامان اور سلامتی کی مخدوش صورتحال ، عدلیہ کے حکومتی کارکردگی پر اثراندازہونے کے باعث ایمرجنسی کا نفاذ ناگزیر ہوگیاتھا۔ اُس وقت کے وزیراعظم نے کابینہ کو یقین دہانی کرائی تھی کہ ایمرجنسی کے نفاذ سے انتخابات میں کوئی تاخیر ہوگی اور نہ ہی جمہوری عمل سست پڑے گا۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں