فوجی کی رہائی کے بعد امریکی جوڑے کی طالبان کی حراست میں موجودگی کاانکشاف

فوجی کی رہائی کے بعد امریکی جوڑے کی طالبان کی حراست میں موجودگی کاانکشاف
فوجی کی رہائی کے بعد امریکی جوڑے کی طالبان کی حراست میں موجودگی کاانکشاف

  



کابل ، واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی فوجی کی رہائی کے بعد ایک اور جوڑے کی افغان طالبان میں حراست میں موجودگی کا انکشاف ہواہے ۔ امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان میری ہارف نے کہا کہ مغوی امریکی خاتون اور اس کے کینیڈین شوہر  کی رہائی کیلئے کوشش کررہے ہیں اور مغوی خاتون کے خاندان سے رابطے میں ہیں تاہم مزید تفصیلات نہیں بتائیں۔ عالمی میڈیا کے مطابق 2012ءسے اب تک مغوی خاتون کی دو ویڈیو ورثا کو موصول ہوچکی ہیں جن میں خاتون نے اپیل کی کہ انہیں اور ان کے شوہر کو افغان طالبان سے رہا کرایا جائے۔لاپتہ ہونے کے وقت امریکی خاتون حاملہ تھی جس کی بازیابی کیلئے خاتون کے والدین جو کہ تصویر میں دیکھے جاسکتے ہیں نے بھی اپیل کی تھی لیکن اب امریکہ نے طالبان کی حراست میں موجودگی کااعتراف کرلیاہے  ۔ یادرہے کہ چند دن قبل قطر کے تعاون سے امریکہ نے اپنا ایک فوجی طالبان کی حراست سے بازیاب کرایا جس کے بدلے میں امریکہ نے گوانتاناموبے جیل سے پانچ طالبان جنگی قیدی رہاکیے تھے جس پراوباماانتظامیہ کو شدید تنقید کابھی سامناکرناپڑا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...