افغانستان سے حملے روکنے کے لئے سرحدی علاقے میں نئی پاکستانی چیک پوسٹیں قائم

افغانستان سے حملے روکنے کے لئے سرحدی علاقے میں نئی پاکستانی چیک پوسٹیں قائم
افغانستان سے حملے روکنے کے لئے سرحدی علاقے میں نئی پاکستانی چیک پوسٹیں قائم

  



باجوڑایجنسی (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان نے باجوڑ ایجنسی کی تحصیل ماموند میں افغانستان سے عسکریت پسندوں کے بڑھتے ہوئے حملے روکنے کے لیے متعدد سرحدی علاقوں میں مزید نئی چیک پوسٹیں قائم کردیں۔ سرکاری ذرائع کے مطابق پاک فوج اور فرنیٹر کور نے تحصیل ماموند میں افغانستان کے صوبہ کنڑ سے عسکریت پسندوںکی باجوڑیجنسی کے سرحدی علاقوں میں دراندازی روکنے اور سرحدی دیہاتوں کو محفوظ بنانے کے لیے بڑے پیمانے پر کارروائیاں شروع کردی ہیں، چیک پوسٹوں کے قیام سے ان علاقوں میں عسکریت پسندوںکا باجوڑایجنسی کے سرحدی علاقوں پر حملے روکنے میں مدد ملے گی۔ حکام کے مطابق ان چیک پوسٹوں سے ایجنسی کے سرحدی علاقوں میں امن وامان کی صورتحال بہتر ہوگی اور عسکریت پسندوںکی آمدورفت مکمل طور پر روکنے میں مدد ملے گی۔میڈیا رپورٹ کے مطابق قبائلی عمائدین نے نئی چیک پوسٹوں کے قیام کا خیرمقدم کیا ہے۔

مزید : باجوڑ


loading...