دوافرادکی ہلاکت،نجی ٹارچر سیل کا سرکاری منتظم گرفتار، سیل سے غیر اخلاقی اشیاءبرآمد

دوافرادکی ہلاکت،نجی ٹارچر سیل کا سرکاری منتظم گرفتار، سیل سے غیر اخلاقی ...
 دوافرادکی ہلاکت،نجی ٹارچر سیل کا سرکاری منتظم گرفتار، سیل سے غیر اخلاقی اشیاءبرآمد

  



شیخوپورہ (مانیٹرنگ ڈیسک)نجی ٹارچر سیل میں فائرنگ کرکے زیرحراست ملزم اور نجی محافظ کو موت کے گھاٹ اُتارنے والے تھانہ بھکھی کے اے ایس آئی سیف اکبر کوحراست میں لے لیاگیاہے ،نجی ٹارچر سیل سے تشدد کے اوزار ، شراب کی بوتلیں اور غیراخلاقی اشیاءبرآمدکرلی گئیں جبکہ ابتدائی تفتیش میں انکشاف ہواہے کہ ملزم نے مقابلے کا رنگ دینے کے لیے نجی محافظ کو بھی قتل کردیاتھا جبکہ وزیراعلیٰ کے نوٹس لینے کے بعد ڈی ایس پی اور تھانیدار کومعطل کردیاگیا۔

تفصیلات کے مطابق تھانہ بھکھی کے ایک موٹر سائیکل چوری کے مقدمہ میں گرفتار ملزم عباس کو تھانہ کی حوالا ت سے نکال کر نجی ٹارچر سیل میں منتقل کیاگیاجہاں اسے تشدد کا نشانہ بنایا جاتارہا۔ گزشتہ روز اے ایس آئی سیف اکبر نے زیر حراست ملزم کو فائرنگ کرکے قتل کر دیا اور پھر اسے جعلی مقابلے کا رنگ دینے کے لئے اپنے ہی محافظ پولیس رضاکار محمد ریاض کو بھی مار دیا۔واقعے کی اطلاع ملتے ہی ڈی پی او شیخوپورہ اورایس ایس پی نجی ٹارچر سیل پہنچ گئے جبکہ تھانہ سٹی اے ڈویژن پولیس نے مقتول عباس کے ماموں زاد خالد کی مدعیت میں اے ایس آئی سیف اکبر، اس کے بھائی کانسٹیبل شمش حامد علی پاشا، شبیر احمد اور ایک نامعلوم شخص کیخلاف مقدمہ درج کر لیا ۔یہ بھی انکشاف ہوا کہ ٹارچر سیل سے تشدد کے اوزار، شراب کی بوتلیں اور غیر اخلاقی اشیاءبرآمد ہوئیں،مذکورہ اے ایس آئی کئی مرتبہ پولیس کی نوکری سے برخاست ہو چکا ہے مگر اپنے اثرورسوخ کی بنا پر بحال ہوجاتا ہے۔

ڈی پی او شیخوپورہ افضال کوثر کا کہنا ہے واقعہ میں جتنے بھی پولیس اہلکار ملوث ہوئے ان کے خلاف قانونی اور محکمانہ سخت کاروائی کی جائے گی۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے شیخوپورہ کے علاقے بکھی میں پولیس کے نجی ٹارچر سیل میںفائرنگ سے 2 افراد کی ہلاکت کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او شیخوپورہ سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی ہے واقعہ کی انکوائری کرکے فی الفور رپورٹ پیش کی جائے اور نجی ٹارچر سیل چلانے اور فائرنگ کے ذمہ داروں کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے جس کے بعد ڈی ایس پی سرکل محمد منشاءاور ایس ایچ او تھانہ بھکھی فیصل چدھڑ کو معطل کر دیا گیا ۔تازہ ترین اطلاعات کے مرکزی ملزم سیف اکبر سمیت تین افراد کو حراست میں لے لیاگیاہے ۔

اہل علاقہ کے مطابق پولیس ملازمین اکثر یہاں ہتھکڑیوں میں جکڑے ملزم کو لاتے رہتے ہیں اور اند ر سے اکثر چیخوں کی آواز بھی سنائی دیتی ہے۔

مزید : جرم و انصاف