کورنگی کے ہسپتال میں پانچ بچے جاں بحق، لواحقین کا احتجاج، تحقیقات کیلئے کمشنر کراچی کی سربراہی میں کمیٹی قائم

کورنگی کے ہسپتال میں پانچ بچے جاں بحق، لواحقین کا احتجاج، تحقیقات کیلئے ...
کورنگی کے ہسپتال میں پانچ بچے جاں بحق، لواحقین کا احتجاج، تحقیقات کیلئے کمشنر کراچی کی سربراہی میں کمیٹی قائم

  



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) کورنگی کے ہسپتال میں ڈاکٹروں کی غفلت کے باعث 5 بچے ہلاک ہو گئے، پولیس نے موقع پر پہنچ کر ہسپتال بند کرا دیا ہے جبکہ ڈاکٹرز فرار ہو گئے ہیں، سندھ کے وزیر اعلیٰ قائم علی شاہ نے کمشنر کراچی کی سربراہی میں تحقیقاتی کمیٹی قائم کر دی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق کورنگی کے ہسپتال میں ڈاکٹرز اور عملے کی غفلت کے باعث پانچ بچے جاں بحق ہو گئے۔ بچوں کی ہلاکت پر علاقہ مکین مشتعل ہو گئے اور بچوں کی ڈیڈ باڈیز کے ساتھ ہسپتال کے باہر احتجاج کیا۔ واقعے کی اطلاع ملنے پر پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور ہسپتال بند کر دیا تاہم ڈاکٹرز فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق ہلاک ہونے والے بچوں کے لواحقین کا کہنا ہے کہ تمام بچے وینٹی لیٹر پر تھے اور ڈاکٹرز کی غفلت کے باعث آکسیجن ختم ہو گئی جس کے باعث پانچ بچے دم توڑ گئے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہسپتال میں ڈاکٹرز کا کام کمپوڈر سرانجام دیتے ہیں اور ڈاکٹرز مریضوں کی دیکھ بھال میں غفلت برتتے ہیں۔ انہوں نے ہسپتال کے ڈاکٹرز اور دیگر عملے کے خلاف کارروائی کا مطالبہ ہے۔ سندھ کے گورنر ڈاکٹر عشرت العباد نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ سندھ کے وزیراعلیٰ قائم علی شاہ نے تحقیقات کیلئے کراچی کے کمشنر کی سربراہی میں کمیٹی قائم کر دی ہے جو دو روز میں ذمہ داروں کا تعین کر کے رپورٹ پیش کرے گی۔ وزیراعلیٰ سندھ نے ملزموں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔

مزید : کراچی /اہم خبریں


loading...