امریکی حسینہ نے اپنے دلخراش ماضی سے پردہ اٹھا دیا

امریکی حسینہ نے اپنے دلخراش ماضی سے پردہ اٹھا دیا
امریکی حسینہ نے اپنے دلخراش ماضی سے پردہ اٹھا دیا

  



نیویارک (نیوز ڈیسک) بظاہر امریکی معاشرہ بہت ہی جدید ، مہذب اور بااخلاق سمجھا جاتا ہے لیکن حقیقت اس سے یکسر مختلف ہے، اس راز سے اکثر و بیشتر خواتین پردہ اٹھاتی رہتی ہیں۔ کچھ عرصہ قبل پامیلا اینڈریسن نے انکشاف کیا تھا کہ اسے بھی بچپن اور جوانی میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔ایک بار پھر ایک اور امریکی حسینہ نے اس سے بھی دلخراش واقعہ سے پردہ اٹھایا ہے۔امریکی ریاست پنسلوانیا کی ملکہ حسن اور 2014 کے امریکی ملکہ حسن کے مقابلے کی نمایاں امیدوار ویلری گیٹونے انکشاف کیا ہے کہ اس کی پیدائش زنابا لجبرکے نتیجے میں ہوئی اور اُس کا باپ کون ہے۔

24سالہ ویلری ٹوڈے ڈاٹ کام کو بتایا کہ اس کی ماں جب 19سال کی تھی تو ایک دن بڑی عمارت کے پیچھے کالے لباس میں ملبوس ایک شخص نے اسے گھیر لیا اور چاقو دکھا کر زبردستی اُسے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ویلری نے بتایاکہ اُس نے چھ سال کی عمر میں اپنی ماں سے اپنے باپ کے متعلق سوالات کرنے شروع کردےئے تھے کیونکہ اٗس نے باپ کو کبھی نہیں دیکھا تھابالآخر جب وہ دس سال کی ہو گئی تواس کی ماں نے اسے سچ بتا دیا۔اس نے بتایا کہ ایک شخص نے اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی جس کے نتیجے میں وہ حاملہ ہو گئی لیکن اس نے اپنے گھر والوں کو اس کے متعلق آگاہ نہ کیا۔اُس کا ارادہ تھا کہ وہ بچے کو پیدا ہونے کے بعد گود لینے کیلئے کسی کے حوالے کر دے گی لیکن جب ویلری پیدا ہوئی تو اٗس کی ماں نے اپنی دادی کے کہنے پر اٗس کی پرورش کا فیصلہ کر لیا ۔ ویلری کا کہنا ہے کہ اگرچہ لوگ اس کی ناجائز پیدائش کو بری بات سمجھ سکتے ہیں لیکن اُس نے کبھی اس منفی بات کو اپنی شخصیت پراثرانداز نہیں ہونے دیا۔ویلری نے بتایا کہ وہ عورتوں میں جنسی زیادتی کے متعلق آگاہ ہی پیدا کرنے کے لئے سرگرم ہے تا کہ عورتیں اس ظلم سے بچ اور اور اس کا نشانہ بننے والی عورتیں خود اعتمادی اور ہمت کے ساتھ زندگی گزار سکیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...