تحریک انصاف کے 5اراکین قومی اسمبلی کا وزیر اعلٰی پرویز خٹک کیخلاف بغاوت

تحریک انصاف کے 5اراکین قومی اسمبلی کا وزیر اعلٰی پرویز خٹک کیخلاف بغاوت

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 ڈیرہ اسماعیل خان (خصوصی رپورٹ) پی ٹی آئی کے پانچ ممبران قومی اسمبلی نے خیبر پختونخوا کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کے خلاف بغاوت کر دی اور انہیں تبدیلی کی راہ میں بڑی رکاوٹ قرار دے دیا۔مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران اراکین قومی اسمبلی داور کنڈی، امیر اللہ مروت، ساجد نواز، خیال زمان آفریدی اور جنید اکبر نے کہا کہ پرویز خٹک کی وجہ سے صوبہ تباہی کی جانب جا رہا ہے، ان کے خلاف اعلان بغاوت کرتے ہیں اور انکی تبدیلی تک تحریک چلائیں گے۔تفصیلات کے مطابق ڈیرہ اسماعیل خان میں پی ٹی آئی کے ایم این ایز نے صوبائی حکومت اور وزراء پر کرپشن کے الزامات عائد کر کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کے خلاف تحریک چلانے کا اعلان کر دیا۔ اراکین قومی اسمبلی میں داور کنڈی، جنید اکبر، خیال زمان آفریدی امیر اللہ مروت اور ساجد نواز شامل تھے تقریب میں جماعت اسلامی اور اے این پی کے ضلعی اور تحصیل نمائندوں کے علاوہ پی ٹی آئی کے فارورڈ بلاک کے اراکین نے بھی شرکت کی۔اراکین قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ وزیر اعلیٰ عمران خان کو سوچی سمجھی سازش کے تحت ناکام کرنے کی کوششیں کر رہے ہیں اور صوبائی وزراء کی کرپشن میں برابر کے شریک ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ بلدیاتی انتخابات کو ایک سال مکمل ہو چکا ہے مگر نچلی سطح پر اختیارات کی منتقلی کی راہ میں کرپٹ ٹولہ رکاوٹ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ واٹر مینجمنٹ، محکمہ مال اور تعلیم میں کرپشن کا بازار گرم ہے اور خیبر پختونخوا میں اپوزیشن نام کی کوئی چیز نہیں، سب کو سی ایم نے اپنے ساتھ ملا رکھا ہے۔منتخب نمائندوں نے الزام عائد کیا کہ پورے صوبے کے فنڈز صرف تین اضلاع پر خرچ کئے جا رہے ہیں جن میں نوشہرہ، مردان اور صوابی شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تبدیلی نظام کو بدلنے سے آئے گی جبکہ پرویز خٹک روایتی سیاستدان ثابت ہوئے ہیں، تین سال گزر چکے ہیں مگر صوبے کی حالت نہیں بدلی جس پر مجبور ہو کر ہمیں میدان میں آنا پڑا۔ انہوں نے اعلان کیا کہ ہم اس کرپشن کے خلاف اس وقت تک بھرپور تحریک چلائیں گے جب تک وزیر اعلیٰ کو اس عہدے سے ہٹایا نہیں جاتا۔

اعلان بغاوت

مزید :

صفحہ اول -