شریف خاندان کا احتساب نہ ہوا تو سڑکوں پر نکلےگے8 ، عمران خان، جلسوں میں خالی لرسیاں عمران کا مستقبل واضع کرر ہی ہیں ، پرویز رشید

شریف خاندان کا احتساب نہ ہوا تو سڑکوں پر نکلےگے8 ، عمران خان، جلسوں میں خالی ...

 کوہاٹ(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ نواز شریف کے بچوں کے متضاد بیانات ان کی طبیعت خراب کرنے کا سبب بنے ہیں۔اگر وہ متضاد بیانات نہ دیتے تو میاں صاحب ٹھیک رہتے۔کوہاٹ میں تحریک انصاف کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ان کے بچوں نے ان کے ساتھ اچھا نہیں کیا۔بیٹی کہتی ہے کہ بیرون ملک میرا کچھ نہیں۔ ایک بیٹا کہتا ہے کہ ہمارے لندن میں فلیٹ ہیں دوسرا کہتا ہے کہ ہمارے پاس کچھ نہیں تھا میرے والد ہمیں پیسے بھیجتے تھے جبکہ نواز شریف کہتے ہیں کہ میں نے کوئی پیسہ باہر نہیں بھیجا۔ ان حالات میں میاں صاحب کی حالت خراب نہ ہوتی توکیا ہوتا۔انہوں نے کہا کہ اگر نواز شریف نے کرپشن نہیں کی تو کیوں ٹی او آرز سے ڈرتے ہو۔ انہوں نے چیلنج کیا کہ جن ٹی او آرز کے تحت نواز شریف کا احتساب ہو انہی کے ذریعے میرا بھی کیا جائے مجھے کوئی اعتراض نہیں۔ ہم ان کو 2018 تک ڈھیل نہیں دینگے اگر ان کا احتساب نہ ہوا تو عمران خان عوام کو لے کر سڑکوں پر آئے گا۔عمران خان نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف ایک ہی رونا روتے ہیں کہ اقتدار میں آنے کے بعد ان کو بہت نقصان ہوا۔ حقیقت یہ ہے کہ اقتدار میں آنے سے پہلے ان کی ایک فیکٹری تھی جو 12سال میں 28ہو گئیں۔انہوں نے مزید کہا کہ کوئی بھی نہیں کہہ سکتا کہ عمران خان نے کسی کو ناجائز نوکری دی یا قرضہ لیا یا فیکٹری لگائی۔ان کا کہنا تھا کہ مغرب اس لئے آگے ہے کیونکہ ان کے لیڈر ایماندار ہیں۔اقتدار کو ذاتی مفاد کیلئے استعمال کرنا کرپشن ہے۔اگر شریف خاندان کا احتساب نہیں ہونا تو جیلوں میں بند تمام غریب افراد کو بھی رہا کیا جائے۔ہم نے کسی صورت بھی شریف خاندان کے احتساب سے پیچھے نہیں ہٹنا۔عمران خان نے کہا کہ اس وقت پاکستان کو سچی قیادت کی ضرورت ہے جس کا جینا مرنا پاکستان میں ہو۔ اس قیادت کے اثاثے پاکستان میں ہونے چاہئیں۔ملک کو ایسی قیادت چاہئے جو اپنا احتساب خود کر سکے۔عمران خان نے مولانا فضل الرحمان کا نام لئے بغیر کہا کہ اس بار الیکشن میں ڈیزل کو ٹینک میں ڈالنا ہے اس کو ووٹ نہیں دینا۔

اسلام آباد (اے پی پی)وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ اولیائے کرام کی درسگاہوں سے ہمیشہ امن کا پیغام ملا اور خانقاہوں سے سکون، امن اور محبت ملتی ہے، اسلام کے امن کے پیغام کو مجروح کیا گیا، وطن عزیز کے چپے چپے سے شرپسندوں کا صفایا کریں گے، ضرب عضب کے ذریعے دہشت گردوں کے انفراسٹرکچر کو ختم کیا ہے مگر انتہاپسندانہ سوچ کو خانقاہوں کے ذریعے ختم کیا جاسکتا ہے اور نظریاتی ضرب عضب کے ذریعے اسلام کا صحیح تشخص اجاگر کرنا ہے، مسلم لیگ (ن) کا پرچم جو خانقاہوں کے ذریعے پاکستان میں لہرایا گیا تھا اب مظفر آباد میں بھی خانقاہوں سے ہونے والی دعاؤں سے لہرایا جائے گا، کوہالہ پل کے دونوں اطرف یہ پرچم لہرائے گا اور امن قائم ہوگا اور لوگ امن اور سکون کی زندگی گزار سکیں، عمران خان کے جلسوں میں خالی کرسیاں ان کا سیاسی مستقبل واضح کر رہی ہیں۔اتوار کو یہاں مسلم لیگ (ن) علماء مشائخ ونگ کے زیراہتمام کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ قوم نے وزیراعظم محمد نواز شریف کی صحت یابی کیلئے دعائیں کرکے بتا دیا ہے کہ وہ وزیراعظم محمد نواز شریف کے ساتھ ہے، وزیراعظم محمد نواز شریف کی صحت یابی کیلئے دعاؤں پر ہم قوم کے مشکور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ قوم نے عمران خان کی منفی سیاست کو مسترد کرتے ہوئے یہ بات واضح کردی ہے کہ ایسے لوگ ملک کیلئے نقصان دہ ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان کے جلسوں میں خالی کرسیاں ان کا سیاسی مستقبل واضح کر رہی ہیں۔ عمران خان خیبر پختونخوا میں ترقیاتی منصوبوں کی بجائے گالی گلوچ والی پرانی کیسٹ لگا لیتے ہیں جس سے عوام تنگ آچکی ہے۔ انہیں چاہئے کہ وہ منفی سیاست ترک کرکے مثبت سیاست میں اپنا کردار ادا کریں تاکہ ملک آگے بڑھے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ عمران خان گزشتہ تین سالوں سے سڑکوں پر روتے آرہے ہیں اور اب پھر سڑکوں پر آنے کی دھمکی دے رہے ہیں‘ ہمیں ان کی دھمکیوں سے کوئی فرق نہیں پڑتا کیونکہ ہم ملکی ترقی و خوشحالی کے سفر کو جاری رکھے ہوئے ہیں جسے جاری ہی رکھیں گے اور عوام کو بہتر معیار زندگی کی فراہمی کیلئے کوشاں رہیں گے۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کو عوام نے بھاری مینڈیٹ دیا اور یہی وجہ ہے کہ ہم عمران خان کے الزامات پر توجہ دینے کی بجائے عوام کے پیار کو اہمیت دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ عوام کا پیار ہی ہے کہ عوام وزیراعظم محمد نواز شریف کی صحت یابی کے لئے بھرپور دعائیں کر رہی ہے، عوام کی دعاؤں کی وجہ سے وزیراعظم محمد نواز شریف تیزی سے صحت یاب ہو رہے ہیں اور انکے ڈاکٹرز وزیراعظم کی صحت میں بہتری پر مطمئن ہیں۔ ملک کی ہر درگاہ اور خانقاہ پر وزیراعظم محمد نواز شریف کی صحت یابی کیلئے دعائیں کی جا رہی ہیں اور اولیاء کرام کی درگاہیں ہی وہ جگہ ہے جہاں سے ہمیشہ امن و محبت کا پیغام ملا ہے اور یہاں آکر دلی سکون، محبت اور امن ملتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اولیاء کرام کے روحانی مراکز صدیوں سے لوگوں کو فیضیاب کر رہے ہیں اور اسی وجہ سے ان درگاہوں پر لوگوں کا تانتا لگا رہتا ہے۔ سینیٹر پرویز رشید کا کہنا تھا کہ قیام پاکستان کے وقت بھی انہی اولیاء کرام نے پاکستان کے پرچم کو بلند کیا، انہیں خانقاہوں اور درگاہوں کے بزرگوں نے ہی قائداعظم محمد علی جناح کا ساتھ دیا اور ان کی مسلم لیگ کا حصہ بنے، اب مظفرآباد کشمیر میں بھی پاکستان مسلم لیگ (ن) کا پرچم آپ لوگوں نے ہی اٹھانا ہے اور نہ صرف مظفرآباد بلکہ پورے پاکستان میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت بنانی ہے تاکہ ملک کو حقیقی معنوں میں آگے لے کرجایا جاسکے اور لوگوں کو بہتر سے بہتر سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں پاکستان کی قدر کرنی چاہئے جسے حاصل کرنے میں ہمارے اولیاء کرام نے بھرپور کردار ادا کیا۔ پاکستان نے ہمیں غلامی سے نجات سمیت سب کچھ دیا ہے۔ وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ خانقاہی نظام صدیوں سے چلتا آرہا ہے جہاں سے ہمیشہ امن اور بھائی چارے کا ہی درس ملا ہے۔ چند لوگوں نے مذہب اسلام کا نام استعمال کرتے ہوئے اسلام کو کسی اور انداز میں دنیا کے سامنے پیش کرنے کی کوشش کی حالانکہ اسلام تو امن و سلامتی اور بھائی چارے کا دین ہے اور یہی درس ہمیں ہماری درگاہوں سے ملتا آیا ہے۔ ہم نے اسلام کا حقیقی چہرہ عالمی دنیا کے سامنے لانا ہے جوکہ ہمارے اولیاء کرام نے پیش کیا اور آج بھی ہماری خانقاہوں اور درگاہوں سے امن و سلامتی کا یہ سلسلہ جاری و ساری ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام کے امن کے پیغام کو مجروح کیا گیا جسے ہم سب نے اجاگر کرنا ہے اور دنیا کو باور کرانا ہے کہ اسلام امن و سلامتی اور بھائی چارے کا دین ہے۔ وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ آپریشن ضرب عضب سے دہشت گردوں کا وطن عزیز کے چپے چپے سے صفایا کیا جا رہا ہے‘ آپریشن ضرب عضب کے ذریعے دہشت گردوں کا صفایا تو کیا جا رہا ہے لیکن ہم نے نظریاتی ضرب عضب کے ذریعے اسلام کے صحیح تشخص کو اجاگر کرنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں یقین ہے کہ خانقاہوں اور درگاہوں کے ذریعے ہی ہم اپنی منزل تک پہنچنے میں کامیاب ہوں گے کیونکہ یہاں سے ہمیں ہمیشہ سیدھا راستہ ملا ہے اور وہ دن دور نہیں جب ہم اپنی منزل تک پہنچنے میں کامیاب بھی ضرور ہوجائیں گے۔ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک کا بابرکت مہینہ آرہا ہے اور میں دعاگو ہوں کہ اللہ تعالی ہم سب کیلئے رحمتوں اور برکتوں کے دروازے کھول دے اور تمام بیماروں کو شفا دے، دکھی لوگوں کے دکھ درد دور کرے اور اللہ تعالیٰ آزادکشمیر میں امانت اور دیانت سے ایک ایسی حکومت کے قیام میں ہم سب کی کوشش کو قبول کرے جس کے نتیجے میں پاکستانی عوام کا ایک ایک پیسہ صرف اور صرف انہی کی فلاح و بہبود اور ترقی پر استعمال ہو، اسے ٹوٹی پھوٹی سڑک کی بجائے ایک اچھی سڑک میسر آئے اور وہ باآسانی اپنا سفر مکمل کرسکے۔ اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ وہ ہم سب کی دعاؤں کو قبول کرے۔

مزید : صفحہ اول