لیڈی ایچی سن ہسپتال میں ڈاکٹرز کی مبینہ غفلت سے خاتون اور نومولود جاں بحق

لیڈی ایچی سن ہسپتال میں ڈاکٹرز کی مبینہ غفلت سے خاتون اور نومولود جاں بحق
لیڈی ایچی سن ہسپتال میں ڈاکٹرز کی مبینہ غفلت سے خاتون اور نومولود جاں بحق

  

لاہور(صباح نیوز)لاہور کے لیڈی ایچی سن ہسپتال میں ڈاکٹرز کی مبینہ غفلت سے خاتون اور نومولود بچہ جاں بحق ہو گئے ۔ لواحقین نے ہسپتال کے سامنے احتجاج کیا جس پر عملے نے انہیں تشدد کا نشانہ بنایا، وزیر اعلی پنجاب نے واقعہ کا نوٹس لے لیا اور سیکرٹری صحت سے رپورٹ طلب کرلی ہے ۔انیس سالہ سمبل لیڈی ایچی سن ہسپتال میں دم توڑ گئی ۔ لواحقین لیڈی ایچی سن ہسپتال کے سامنے سراپا احتجاج بن گئے ۔ سڑک اور ہسپتال کے داخلی اور خارجی راستے بند کر دیئے گئے ۔ سمبل کو گذشتہ شام ہسپتال منتقل کیا گیا ،لواحقین کا کہنا ہے کہ مریضہ ساری رات درد سے تڑپتی رہی لیکن مسیحائوں نے کوئی توجہ نہ دی ، لواحقین کا کہنا ہے کہ علی الصبح ڈاکٹرز کی غفلت کے باعث زچہ و بچہ دونوں دم توڑ گئے جس پر احتجاج کیا تو عملے نے انہیں تشدد کا نشانہ بنایا جبکہ ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے معاملے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں ۔تھانہ گوالمنڈی پولیس نے موقع پر پہنچ کر کارروائی کرتے ہوئے واقعے کی تفتیش شروع کر دی جبکہ وزیر اعلی نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری صحت سے رپورٹ طلب کر لی اور واقعہ کے ذمہ داران کے خلاف فوری کارروائی کا حکم دے دیا ۔

مزید : لاہور