پولنگ سکیم اعتراضات پر 5درخواستوں کی سماعت

پولنگ سکیم اعتراضات پر 5درخواستوں کی سماعت

لاہور(نامہ نگار)پولنگ سکیم پر اعتراضات کے حوالے سے 5درخواستوں پر سماعت ہوئی ،ڈسٹرکٹ ریٹرنگ آفیسر نے اعتراضات فائل کرنے والوں کو 7جون کو دوبارہ بحث کے لئے طلب کرلیاہے ،گزشتہ روز سابق ایم پی اے میاں اسلم اقبال نے بھی پولنگ سٹیشنز پر اعتراضات فائل کردیئے ہیں۔ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر عابد حسین قریشی نے حلقہ این اے134پی پی 136سمیت 5اعتراضات پر سماعت کی ،ڈی آر او نے اعتراضات فائل کرنے والے 5شہریوں کو 7تاریج کو دوبارہ بحث کے لئے طلب کرلیا ہے۔دوسری جانب سابق ایم پی اے میاں اسلم اقبال نے بھی پولنگ سٹیشنز پر اعتراضات فائل کردیئے ہیں جس پرڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفسر عابد حسین قریشی نے کاروائی کرتے ہوئے میاں اسلم اقبال کو 7 جون کو دلائل کے لئے طلب کرلیا ہے۔اسلم اقبال نے موقف اختیار کیا ہے کہ حلقہ این اے 126 کے اکثر پولنگ سٹیشنز تنگ جگہوں پر بنائے گے ہیں۔دریں اثناء ڈسٹرکٹ ریٹرنگ آفیسر لاہور کے زیر صدارت سکیورٹی کا اجلاس منعقدہوا حس میں متعلقہ ایس پی سٹی ڈویژن علی رضا سمیت پولیس کے اعلیٰ افسران شریک ہوئے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کاغذات نامزدگی جمع کروانے والے امیدوار اپنے ساتھ 10سے زیادہ حامی نہ لانے کے پابند ہوں گے جبکہ یہ فیصلہ سکیورٹی خدشات کے باعث کیا گیا ہے کہ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ کاغذات نامزدگی جمع کرانے والوں کے لئے ایک گیٹ محتص کر دیا گیاہے ۔مزید برآں سیشن عدالت میں عام انتخابات کے لئے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے دوران بجلی کی طویل بندش سے ریٹرننگ آفسران کو(آر اوز) کو شدید مشکلات کا سامنا رہا،موبائل کی روشنی سے عدالتی عملہ اور انتخابی عملہ کام چلاتا رہا۔سیشن کورٹ میں بجلی کی طویل بندش کے باعث الیکشن سیل اور ریٹرننگ افسران کو سخت پریشانی کا سامنا کرنا پڑاجبکہ بجلی نہ ہونے کے باعث کاغذات نامزدگی جمع کروانے والوں کو سخت پریشانی کا سامنا رہا، جنریٹر موجود ہونے کے باوجود زیادہ دیر بجلی مہیا نہ کر سکا،ڈسٹرکٹ ریٹرنگ آفیسر نے چیف ایگزیکٹو لیسکو کو بلا تعطل بجلی فراہم کرنے کی ہدایت کردی ہے۔

مزید : علاقائی