نگران وزیر اعظم کا بد ترین لوڈشیڈنگ کانوٹس،دورانیہ کم کرنے کی ہدایت

نگران وزیر اعظم کا بد ترین لوڈشیڈنگ کانوٹس،دورانیہ کم کرنے کی ہدایت

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر ، مانیٹرنگ ڈیسک) نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصرالملک کی 6 رکنی وفاقی کابینہ نے حلف اٹھالیا جنہیں وزارتوں کے قلمدان بھی سونپ دیے گئے۔ایوان صدر میں صدر ممنون حسین نے نگران کابینہ سے حلف لیا۔ کابینہ میں شامل اراکین میں شمشاد اختر ، عبداللہ حسین ہارون، روشن خورشید برونچا، اعظم خان، سید علی ظفر اور محمد یوسف شیخ شامل ہیں۔ کابینہ ڈویڑن کی جانب سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق عبداللہ حسین ہارون کو وزارت خارجہ اور نیشنل فوڈ سیکیورٹی کا قلمدان دیا گیا جب کہ وزارت دفاع و دفاعی پیداوار کا اضافی چارج بھی ان کے پاس ہوگا۔ڈاکٹر شمشاد اختر کو وزارت خزانہ، شماریات اور وزارت منصوبہ بندی کا قلمدان دیا گیا ہے، اس کے ساتھ وزارت تجارت اور وزارت انڈسٹریز و پیدوار کا اضافی چارج بھی ڈاکٹر شمشاد اختر کے پاس ہوگا۔اعظم خان کو وزارت داخلہ، وزارت کیڈ اور وزارت نارکوٹکس کنٹرول کا قلمدان دیا گیا ہے اور ان کے پاس وزارت بین الصوبائی رابطہ کا اضافی چارج بھی ہوگا۔کابینہ میں شامل سید علی ظفر کو وزارت قانون و انصاف، وزارت پارلیمانی امور اور وزارت اطلاعات کا قلمدان دیا گیا ہے۔یوسف شیخ کو وزارت وفاقی تعلیم پروفیشنل ٹریننگ کا چارج دیا گیا ہے جب کہ وزارت نیشنل ہیلتھ سروسز اور وزارت مذہبی امور کا اضافی چارج بھی اْن کے پاس ہوگا۔ روشن خورشید بروچہ کو وزارت انسانی حقوق، کشمیر و گلگت بلتستان امور اور وزارت سیفران کا قلمدان دیا گیا ہے۔یاد رہے کہ نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصرالملک نے یکم جون کو اپنے عہدے کا حلف اٹھایا جو 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات 2018 کے انعقاد کے پابند ہیں۔

کابینہ حلف

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر ، مانیٹرنگ ڈیسک) نگران وزیراعظم نے ملک میں بدترین لوڈ شیڈنگ کا نوٹس لے لیا۔نگران وزیراعظم کی زیرصدارت پاور سیکٹر کا اعلی سطحی اجلاس ہوا جس میں انہیں ایم ڈی پیپکو، ایم ڈی این ٹی ڈی سی اور دیگر اعلی حکام نے انہیں بریفنگ دی۔بریفنگ میں بتایا گیا کہ موجودہ بجلی پیداواری صلاحیت 28 ہزار 704میگا واٹ ہے جب کہ گزشتہ مہینے ہائیڈل جنریشن 3 ہزار 90 میگاواٹ رہی ہے۔بریفنگ میں کہا گیا ہے کہ پانی کی کمی اور سخت موسمی حالات کے باعث بجلی کی پیداوار میں کمی ہوئی ہے لیکن اس کے باوجود گزشتہ کابینہ کے رمضان لوڈ مینجمنٹ پلان پر عمل در آمد کی کوشش کررہے ہیں۔نگران وزیر اعظم نے وزارت پانی وبجلی کو لوڈشیڈنگ کم کرنے اور پاور سیکٹر لاسز اور نظام کی بہتری کے حوالے سے اقدامات کی ہدایت کی۔ڈسکوز میں بھاری نقصانات پر نگران وزیراعظم نے اظہار برہمی کرتے ہوئے ہدایت کی کہ تمام ادارے اور وزارت توانائی نقصانات کے ازالے کے لیے اقدامات کریں، وفاقی اور صوبائی سطح پر مدد کی ضرورت ہو تو آگاہ کریں۔نگران وزیر اعظم نے پاورجنریشن، ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن کی بہتری کے لیے اقدامات کرنے کی بھی ہدایت کی۔ اس حوالے سے نگران وزیر اعظم نے کہا کہ ایسا جامع پلان تیار کیا جائے جو آئندہ منتخب حکومت کے لیے مددگار ثابت ہو۔

نگران وزیر اعظم

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...