ایازصادق کی اپیل ایک منٹ میں خارج ہوسکتی ہے،سنگل بنچ فیصلے کیخلاف انٹراکورٹ اپیل دائرکیوں نہیں کی؟چیف جسٹس کے کاغذات نامزدگی ترمیم کیس میں ریمارکس

ایازصادق کی اپیل ایک منٹ میں خارج ہوسکتی ہے،سنگل بنچ فیصلے کیخلاف انٹراکورٹ ...
ایازصادق کی اپیل ایک منٹ میں خارج ہوسکتی ہے،سنگل بنچ فیصلے کیخلاف انٹراکورٹ اپیل دائرکیوں نہیں کی؟چیف جسٹس کے کاغذات نامزدگی ترمیم کیس میں ریمارکس

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)کاغذات نا مزدگی سے متعلق ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف اپیلوں کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایازصادق کی اپیل ایک منٹ میں خارج ہوسکتی ہے،سنگل بنچ فیصلے کیخلاف انٹراکورٹ اپیل دائر کیوں نہیں کی؟۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں بنچ نے کاغذات نامزدگی سے متعلق فیصلے کیخلاف اپیلوں کی سماعت کی، چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ کیاایازصادق کی اپیل قابل سماعت ہے؟،ایازصادق کی اپیل ایک منٹ میں خارج ہوسکتی ہے،سنگل بنچ فیصلے کیخلاف انٹراکورٹ اپیل دائرکرنی چاہئے تھی۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ بطورسپیکراسمبلی ایازصادق کاحق دعویٰ کیا ہے؟،موجودہ حالات میں سپیکرکاحق دعویٰ نہیں ہے،امیدواروں سے متعلق مکمل معلومات ملنے میں مسئلہ کیا ہے؟،چیف جسٹس نے کہا کہ عوام کوامیدواروں کی حیثیت کامعلوم ہوناچاہئے،امیدواروں کواپنے اوربچوں کے اکاو¿نٹ،اثاثے بتانے میں مسئلہ کیاہے؟۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ کیا 2013 کاالیکشن فارم کسی قانون کے تحت تھا؟،انٹراکورٹ اپیل دائرکئے بغیرعدالت عظمیٰ نہیں آسکتے۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...