’’ ایک دن مرنا ہے کیونکہ آخر موت ہے ‘‘

’’ ایک دن مرنا ہے کیونکہ آخر موت ہے ‘‘
’’ ایک دن مرنا ہے کیونکہ آخر موت ہے ‘‘

  

ایک حافظ قرآن کی بیوی کو گردن توڑ بخار ہو گیا ،وہ ہسپتال کے وارڈ میں زیر علاج تھی اور علاج سے اسے کافی افاقہ ہو رہا تھا ،ایک روز شام کے وقت وارڈ کی نرس نے ڈاکٹر کو فون پر بتایا کہ مریضہ بلند آواز میں کلمہ طیبہ کا ورد کر رہی ہے ،ڈاکٹر بھاگم بھاگ وارڈ میں داخل ہوا تو مریضہ اللہ کو پیاری ہو چکی تھی ،یہ مرحومہ نماز ،روزے کی پابند اور حافظہ بتائی جاتی تھی ۔۔۔۔

۔۔۔ویڈیو دیکھیں۔۔۔۔

مزید : وڈیو گیلری