امریکا کا خوف، فرنچ کمپنی نے ایران میں اپنی تمام سرگرمیاں روک دیں

امریکا کا خوف، فرنچ کمپنی نے ایران میں اپنی تمام سرگرمیاں روک دیں
امریکا کا خوف، فرنچ کمپنی نے ایران میں اپنی تمام سرگرمیاں روک دیں

پیرس(این این آئی)فرانسیسی کار ساز ادارے پی ایس اے نے ایران میں اپنی تمام تر تجارتی سرگرمیاں روک دینے کا اعلان کر دیا ہے۔

میڈیارپورٹس کے مطابق ایک بیان میں پی ایس اے نے بتایاکہ یہ اقدام امریکا کی جانب سے ایران پر پابندیاں بحال کرنے کے تناظر میں کیا گیا ہے۔فرانسیسی کار ساز ادارے پی ایس اے کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ ایران کے ساتھ کیے گئے بین الاقوامی جوہری معاہدے سے امریکا کی دستبرداری کے بعد تہران حکومت پر پابندیوں کا خطرہ بڑھ گیا ہے، اس صورتحال میں ایران میں گاڑیاں فروخت کرنا نقصان دہ سودا ہو سکتا ہے۔ 

پی ایس اے نے مزید کہا کہ اس سلسلے میں 2 مقامی کمپنیوں کے ساتھ اشتراک عمل کے خاتمے کا آغاز بھی کر دیا گیا ہے۔پی ایس اے یورپ کا دوسرا سب سے بڑا کار ساز ادارہ ہے، جس نے 2016ء میں بین الاقوامی پابندیوں میں نرمی کے بعد دو ایرانی کار ساز اداروں خودرو اور سایپا سے معاہدے کیے تھے۔ پی ایس اے پیڑو اور سٹروئن کاریں تیار کرتا ہے۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...