خاتون سے بد اخلاقی کی کوشش پر گورنر ہاؤس کا ڈاکٹر برطرف، گرفتار کر لیاگیا

خاتون سے بد اخلاقی کی کوشش پر گورنر ہاؤس کا ڈاکٹر برطرف، گرفتار کر لیاگیا

  

لاہور(نمائندہ خصوصی،کرائم رپورٹر)گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے گور نر ہاؤس کے ڈاکٹر کی جانب سے خاتون کو ہر اساں کر نے کے معاملے کا سخت نوٹس لے لیا۔ ڈاکٹر مشرف کو انکے عہدے سے فارغ کرتے ہوئے سی سی پی او لاہور کو ڈاکٹر کے خلاف قانون کے مطابق کاروائی کی ہدایت کردی۔ گور نر ہاؤس لاہورکے تر جمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے گور نر ہاؤس کے مشرف نامی ڈاکٹر کی جانب سے خاتون کو ہر اساں کر نے کا معاملہ سامنے آنے پر سخت نوٹس لیتے ہوئے ڈاکٹر کو انکے عہدے سے فارغ کر دیا ہے اور سی سی پی او لاہور سے اس معاملے پر24گھنٹوں میں رپورٹ بھی طلب کر لی ہے۔یاد رہے کہ پولیس خاتون کی جانب سے درج کروائے جانے والے مقدمے کے اندراج کے بعد ڈاکٹر مشرف کو گرفتار بھی کرچکی ہے۔ دوسری جانب عظمٰی شہزادی نامی خاتون کے ساتھ کلینک میں ہراساں کرنے کی کوشش کے معاملہ میں حقائق سے پردہ اْٹھنے لگا ہے۔ ذرائع کے مطابق عظمیٰ شہزادی اندراج مقدمات کے ذریعے الزام علیہان پر دباؤ ڈال کر بھاری رقوم بٹورتی اورصلح کرتی رہی ہے۔ مدعیہ کی دائر کردہ درخواست کے مطابق ڈاکٹر کی جانب سے اس کے ساتھ بداخلاقی کی کوشش کی گئی جبکہ پولیس ریکارڈ کے مطابق عظمی شہزادی پہلے بھی پنجاب بھر کے مختلف تھانوں میں متعدد افراد کے خلاف اسی نوعیت کے مقدمات درج کرواتی رہی ہے۔ مدعیہ کی جانب سے درج متعدد مقدمات جھوٹے ثابت ہونے پر عدالت سے خارج کردیئے گئے تھے۔حالیہ واقعہ میں بھی عظمٰی شہزادی نے اپنی میڈیکولیگل رپورٹ کروانے سے صاف انکار کردیا ہے جبکہ عظمٰی شہزادی کریمنل ریکاڈ یافتہ چوری، تشدد نیز جان سے مارنے کی دھمکیاں دینے سمیت جرائم کی مختلف وارداتوں میں بھی ملوث رہی ہے۔

ڈاکٹر گرفتار

مزید :

صفحہ آخر -