آمدہ بجٹ آئی ایم ایف نہیں بلکہ عوامی شرائط پر بنایا جائے‘فائق شاہ

آمدہ بجٹ آئی ایم ایف نہیں بلکہ عوامی شرائط پر بنایا جائے‘فائق شاہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاو ر(سٹی رپورٹر) چیئرمین امن ترقی پارٹی محمد فائق شاہ نے حکمرانوں کو متنبہ کیا کہ آمدہ بجٹ آئی ایم ایف کی نہیں عوامی شرائط پر بنایا جائے اور پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی سے فائدہ اٹھا کر بجلی اور گیس سستی کی جائے تاکہ نئی صنعتوں کا قیام عمل میں آ سکے، ٹیکس میں چھوٹ دے کر صنعتی انقلاب لایا جاسکتا ہے۔ محمد فائق شاہ نے کہا کہ یہ افسوسناک بات ہے کہ حکومت آئی ایم ایف کی چھتری تلے ملازمین کی تنخواہوں کو منجمد اور ترقیاتی بجٹ میں کمی لانا چاہتی ہے مہنگائی کے تناسب سے تنخواہیں بڑھائی جائیں، انہوں نے واضح کیا کہ عالمی مالیاتی اداروں کی گائیڈ لائن غربت کے اس ہجوم میں قابلِ عمل نہیں ہیں ملک میں شدید احتجاج ہوگا۔ ظالمانہ ٹیکس سسٹم ختم کر کے آمدنی کا تناسب دیکھا جائے انہوں نے کہا کہ دو سال ہونے کو ہیں حکومت ابھی تک چیف ایکنومیسٹ تلاش کر رہی ہے، اس سے زیادہ نااہلی کیا ہو سکتی ہے؟ انہوں نے کہا کہ پیداواری صلاحیت، سرمایہ کاری، اور زراعت وصنعت کے لئے بجٹ میں ایمرجنسی فنڈز رکھے جائیں عوام کی بنیادی ضروریات اور حقوق تعلیم، صحت، انصاف اور روزگار سے وابستہ ہیں موجودہ وباء میں نظام صحت کھل کر بے نقاب ہو چکا ہے، ماضی اور حال میں اقتدار میں رہنے والا طبقہ اس کا ذمہ دار اور عوام پوچھنے کے حق دار ہیں، امن ترقی پارٹی سوال، محاسبہ اور قابل عمل منصوبے پیش کرتی رہے گی ہر صورت عوامی مفاد کو ترجیح دی جائے گی اور ان کے ساتھ مل کر تکمیل پاکستان اور روشن مستقبل کے لیے جدوجہد جاری رکھیں گے۔موجودہ حکومت کو اوائل سے قابل عمل معاشی ترقی کی تجاویز دے چکے ہیں، اس پر فی الفور عمل درآمد کیا جائے۔ہمیں اپنے غریب عوام کا مفاد دیکھنا چاہیے نہ کہ اشرافیہ کے تحفظ اور عالمی مالیاتی اداروں کی دوہری پالیسی کی ضرورت ہے