نسل پرستی کے خلاف احتجاج، بڑی سوشل میڈیا سائٹ کے بانی نے عہدے سے استعفیٰ دے دیا، نئی تاریخ رقم کردی

نسل پرستی کے خلاف احتجاج، بڑی سوشل میڈیا سائٹ کے بانی نے عہدے سے استعفیٰ دے ...
نسل پرستی کے خلاف احتجاج، بڑی سوشل میڈیا سائٹ کے بانی نے عہدے سے استعفیٰ دے دیا، نئی تاریخ رقم کردی

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) سوشل میڈیا ویب سائٹ Redditکے شریک بانی الیکسس اوہانیان نے نسل پرستانہ پوسٹس نہ روک پانے پر احتجاجاً عہدے سے استعفیٰ دے کر نئی مثال قائم کر دی۔ میل آن لائن کے مطابق دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کی طرح Redditپر بھی نسل پرستانہ پوسٹس بڑی تعداد میں کی جا رہی ہیں۔ خاص طور پر امریکی شہر منیپولیس میں سیاہ فام شہری جارج فلوئیڈ کے پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں قتل کے بعد دونوں طرح کے لوگ سوشل میڈیا پر محاذ کھولے ہوئے ہیں۔ ایک وہ جو سیاہ فام شہریوں کی زندگیوں کو بھی اہم قرار دے رہے ہیں اور دوسرے وہ نسل پرست سفید فام جو سیاہ فام شہریوں کے متعلق زہر اگل رہے ہیں۔

الیکسس اوہانیان معروف سیاہ فام ٹینس سٹار سرینا ولیمز کے شوہر اور ایک بیٹی کے باپ ہیں۔ چنانچہ انہوں نے سفید فام نسل پرستوں کی پوسٹس نہ روک پانے پر اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ انہوں نے ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ کی جس میں انہوں نے کہا کہ ”میں ایک سیاہ فام بیٹی کا باپ ہوں اور مجھے اس کو جواب دینا پڑے گا کہ میری ویب سائٹ پر یہ سب کچھ ہوتا رہا اور میں نے اسے روکنے کے لیے کیا کیا؟میں عہدے سے اپنے لیے، اپنی فیملی کے لیے اور اپنے ملک کے لیے مستعفی ہو رہا ہوں، تاکہ میری سیٹ پر کوئی سیاہ فام شہری آئے۔“ سرینا ولیمز بھی اپنے شوہر کے اس اعلان کے بعد سوشل میڈیا پر آئیں اور اپنے شوہر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ”مجھے آپ پر فخر ہے اور آپ ’مجھ‘ سے نہیں بلکہ ’ہم‘ (سیاہ فام شہری بحیثیت مجموعی)سے جو وابستگی اور خلوص رکھتے ہیں، مجھے اس پر فخر ہے۔ “ واضح رہے کہ Redditکے سابق چیف ایگزیکٹو آفیسر ایلن پاﺅ نے گزشتہ دنوں کمپنی کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا کہ ”انہوں نے کہا تھا کہ ویب سائٹ پر نہ صرف نسل پرستوں کے اکاﺅنٹس ہیں بلکہ کمپنی ان کی پوسٹس سے رقم کما رہی ہے جو کہ کمپنی کی انتظامیہ کے لیے شرم کا مقام ہے۔“ایلن پاﺅ کے اس بیان کے دو روز بعد الیکسس اوہانیان کے استعفے کا اعلان سامنے آ گیا۔

مزید :

بین الاقوامی -