کورونا وائرس لاک ڈاﺅن کے سبب سعودی عرب میں طلاق کی شرح میں ہوشربا اضافہ، شوہر رنگے ہاتھوں پکڑے جانے لگے

کورونا وائرس لاک ڈاﺅن کے سبب سعودی عرب میں طلاق کی شرح میں ہوشربا اضافہ، ...
کورونا وائرس لاک ڈاﺅن کے سبب سعودی عرب میں طلاق کی شرح میں ہوشربا اضافہ، شوہر رنگے ہاتھوں پکڑے جانے لگے

  

جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) لاک ڈاﺅن کی وجہ سے سعودی عرب میں ایک سے زائد خفیہ شادیاں کرنے والے مرد رنگے ہاتھوں پکڑے جانے لگے ہیں اور طلاق کی شرح میں ہوشربااضافہ ہو گیا ہے۔ مڈل ایسٹ مانیٹر کے مطابق لاک ڈاﺅن کے دنوں میں ملک میں طلاق کی شرح میں 30فیصد اضافہ ہو گیا ہے۔ طلاق لینے والی خواتین میں اکثریت ڈاکٹر، ملازمت پیشہ اورکاروباری خواتین کی ہے جو کمیونٹی میں نمایاں مقام رکھتی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ان خواتین میں سے اکثریت ایسی ہے جن کے شوہروں نے خفیہ شادیاں کر رکھی تھیں۔ لاک ڈاﺅن میں جب ہمہ وقت انہیں اپنی بیویوں کے پاس رہنا پڑ گیا تو مختلف طریقوں سے ان کی دوسری شادیوں کا پردہ فاش ہو گیا اور بیویوں نے طلاق کے لیے عدالتوں سے رجوع کر لیا۔ یہ 30فیصد اضافہ فروری کے مہینے میں ریکارڈ کیا گیا۔ گزشتہ سال فروری کی نسبت اس سال فروری میں 7ہزار 482جوڑوں کی طلاق ہوئی۔ دوسری طرف فروری کے مہینے میں ملک میں شادیوں کی شرح میں بھی اضافہ دیکھنے میں آیا۔ گزشتہ سال فروری کی نسبت رواں سال اس مہینے میں 5فیصد زیادہ شادیاں ہوئیں۔

مزید :

عرب دنیا -