کورونا وائرس اور سندھ کی صورتحال،تحریک انصاف کی رکن اسمبلی ڈاکٹر سیما ضیاءنے پیپلزپارٹی کی صوبائی حکومت کا پول کھول دیا 

کورونا وائرس اور سندھ کی صورتحال،تحریک انصاف کی رکن اسمبلی ڈاکٹر سیما ...
کورونا وائرس اور سندھ کی صورتحال،تحریک انصاف کی رکن اسمبلی ڈاکٹر سیما ضیاءنے پیپلزپارٹی کی صوبائی حکومت کا پول کھول دیا 

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کی رہنماء و رکن سندھ اسمبلی ڈاکٹر سیما ضیاء نے کہا کہ سندھ حکومت نے کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کے لیے کوئی ہیلپ لائن متعارف نہیں کروائی جس کے تحت ڈاکٹروں،مریضوں اور ان کے لواحقین کو یہ معلوم ہوسکے سندھ کے کس ہسپتال میں مریضوں کے لیے وینٹیلیٹرز،بیڈز یا آئسولیشن وارڈ موجود ہے۔

میڈیا ڈپارٹمنٹ سے جاری کردہ بیان میں ڈاکٹر سیما ضیاء نے کہا کہ سندھ حکومت کی کارکردگی انتہائی افسوسناک ہے، کورونا جیسی وباء کا مقابلہ کرنے کہ سندھ کا آئی ٹی سسٹم مکمل فیل ہوگیا ہے، ویب سائٹ پر دی گئی ہدایات اور نمبرز اکثر و بیشتر بند ہوتے ہیں، ہیلپ لائن کال سینٹر قائم کرنے سے عوام جگہ جگہ دھکے کھانے سے بھی بچ جائیں گے اور پھر وقت کے ضیاع کا سامنا بھی نہیں ہوگا، سندھ حکومت کورونا وائرس کے مریضوں کے لیے ایک مکمل مکینزم بنائے۔

رکن سندھ اسمبلی سیماء ضیاء نے مزید کہا کہ ہم بحیثیت اپوزیشن وزیر اعلیٰ سندھ کو کہتے ہیں کہ اگر ہماری خدمات کی ضرورت ہے تو ہم حاضر ہیں،سندھ حکومت کے پاس صحیح مشورے دینے والے وزراء موجود نہیں، شہر کراچی کے ہسپتالوں کا حال انتہائی ابتر ہے ،مختلف کلینکس میں روزانہ 6 سے 7 مریض لائے جارہے ہیں، ڈاکٹرز انہیں چیک کرنے کے بعد ہسپتال میں داخل ہونے کا مشورہ دیتے ہیں لیکن ان مریضوں کی رہنمائی کے لیے کوئی سسٹم موجود نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ ہسپتالوں اور مریضوں کے درمیان  کوآرڈی نیشن قائم کرنے کے لیے ہیلپ لائن سینٹر کا قیام ضروری ہے، ہسپتالوں کی معلومات ہر ڈسٹرکٹ سطح تک کی جانی چاہئے، اگر سندھ کے حکمرانوں کا رویہ تنقید برائے تنقید رہا تو عالمی وباء پر قابو پانا مشکل ہو جائے گا۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -کورونا وائرس -