کرونا کے خاتمہ تک فیسوں میں رعایت دی جائے:انجمن طلبہ اسلام

کرونا کے خاتمہ تک فیسوں میں رعایت دی جائے:انجمن طلبہ اسلام

  

  لاہور(سٹی رپورٹر) انجمن طلباء اسلام کے زیر اہتمام پری بجٹ ایجوکیشنل ڈائیلاگ سے مقررین نے اظہار خیال کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ آئندہ مالی سال کے بجٹ میں تعلیم کے لئے مجموعی بجٹ کا پانچ فیصد جبکہ اعلیٰ تعلیم کے لئے 150بلین مختص کئے جائیں، تعلیمی بجٹ میں صوبوں کی پسماندہ جامعات کے لئے خصوصی پیکج مختص کرنا ناگزیر ہے، کرونا وبا کے خاتمے تک طلباء کو فیسوں میں خصوصی رعایت دی جائے جبکہ جامعات کے اساتذہ کی تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے، جامعات میں ریسرچ اور ترقیاتی منصوبوں کے بجٹ میں کٹوتی برداشت نہیں، تعلیمی بجٹ کی تیاری کے لئے اساتذہ سمیت طلباء نمائندوں سے بھی مشاورت کی جائے جس کے لئے تمام سٹیک ہولڈرز پر مشتمل ایک اعلی سطحی کمیٹی تشکیل دی جائے، تعلیمی بجٹ میں اس سال کمی کی گئی تو ملک گیر تحریک چلائی جائے گی، پری بجٹ ڈائیلاگ سے اے ٹی آئی کے مرکزی سیکرٹری محمد حسنین مصطفا ئی،پی پی پی پنجاب کے پارلیمانی لیڈر سید حسن مرتضی، سابق وزیر تعلیم پنجاب میاں عمران مسعود، وائس چانسلر ڈاکٹر طاہر حجازی، صدر فپواسا ڈاکٹر نیک محمد، سابق سیکرٹری الیکشن کمیشن کنور دلشاد، سینئر کالم نگار مظہر برلاس، سیکرٹری جنرل متحدہ طلباء محاذ ملک موسی کھوکھر، پروفیسر طاہر ملک،مجلس وحدتِ المسلمین کے سیکرٹری جنرل ناصر عباس شیرازی، انجمن طلباء  اسلام کے سابق صدر نعمان الجبار، ماہر تعلیم مرتضی نور، متحدہ طلبہ محاذ کے ترجمان محمد اکرم رضوی سمیت دیگر شخصیات نے خطاب کیا،، طلباء نے مطالبات نہ منظور ہونے کی صورت میں ملک گیر احتجاجی تحریک کا عندیہ بھی دے دیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -