پاکستان کا بھارت میں یورینیم کی غیر قانونی فروخت پر تحقیقات کا مطالبہ

پاکستان کا بھارت میں یورینیم کی غیر قانونی فروخت پر تحقیقات کا مطالبہ

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)پاکستان نے بھارت میں غیر قانونی طور پر یورینیم کی برآمدگی اور اور فروخت سے متعلق متعدد واقعات پر تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چوہدری نے بھارت میں 6 کلو یورینیم فروخت میں ملوث افراد سے متعلق میڈیا رپورٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا پاکستان، بھارت میں یورینیم مواد کی غیرقانونی فروخت جیسے واقعات کی مکمل تحقیقات اور جوہری مواد کی حفاظت کے اقدامات پر زور دیتا ہے، بھارتی ریاست جھارکھنڈ میں یورینیم کی کانیں ہیں اور ایک یورینیم پروسیسنگ پلانٹ بوکوارو شہر سے ڈیڑھ سو کلومیٹر دور جادگوڈا میں واقع ہے۔زاہد حفیظ چوہدری نے کہا یہ واقعات ’ناقص کنٹرول، ناقص ریگولیٹری اور اس کے کمزور نفاذ کے طریقہ کار کی نشاندہی کرتے ہیں، جس سے ظاہر ہوتا ہے بھارت کے اندر ایٹمی مواد کی بلیک مارکیٹ وجود ہے۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 1540 اور ایٹمی مواد کے تحفظ سے متعلق آئی اے ای اے کنونشن کی مدد سے ریاستوں کو پابند بنایا جائے وہ جوہری مواد کو غلط ہاتھوں میں جانے سے روکنے کے لیے سخت اقدامات کو یقینی بنائیں۔

پاکستان مطالبہ

مزید :

صفحہ اول -