جامعہ دارالعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک میں نئے تعلیمی شعبے تخصیص فی الداعووالا رشاد کا اجراء

جامعہ دارالعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک میں نئے تعلیمی شعبے تخصیص فی الداعووالا ...

  

 نوشہرہ (بیورورپورٹ)جامعہ دارالعلوم حقانیہ میں نئے تعلیمی شعبے تخصص فی الدعو والارشاد کا قیام  جامعہ دارالعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک میں نئے تعلیمی شعبے تخصص فی الدعو  والارشاد Specialization in Dawah and Counseling کا اجرا ہوا،جس کی افتتاحی تقریب سے شیخ الحدیث حضرت مولانا انوار الحق صاحب مہتمم جامعہ حقانیہ،سینئر نائب صدر وفاق المدارس العربیہ پاکستان،  نائب مہتمم مولانا حامد الحق حقانی،شیخ الحدیث مولانا محمد ادریس،شیخ الحدیث مولانا عبدالقیوم حقانی،مولانا راشد الحق سمیع (مدیرالحق)، مفتی ذاکر حسن  اورمولانا مفتی مختار اللہ حقانی،مولانا حبیب اللہ حقانی، مولانا یاسر نعمانی نے خطاب فرمایا۔مولانا انوار الحق صاحب نے اس موقع پر شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دارالعلوم میں اس نئے شعبے کے قیام کے بہت مفید اثرات مرتب ہوں گے۔ انہوں نے تخصص دعوہ والارشاد کی افادیت و اہمیت پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔آپ کے بعد مولانا حامد الحق حقانی نے کہاکہ دارالعلوم حقانیہ عالم اسلام کا ممتاز دینی ادارہ ہے، اور اس نئے شعبے میں پڑھنے والے طلبا زندگی کے مختلف شعبوں میں بہتر انداز میں دین اسلام کی موثر طورپر خدمت کرسکیں گے۔اگر آج مولانا سمیع الحق شہید زندہ ہوتے تو اس نئے  شعبے کے قیام وافتتاح پر بہت زیادہ خوش ہوتے۔ حضرت مولانا ادریس صاحب اور مولانا عبدالقیوم حقانی صاحب نے تخصص فی الدعوہ  والارشاد  کے قیام کو سراہتے ہوئے اسے وقت کی اہم ضرورت اور شعبہ تعلیم کی کامیابی قرار دیا۔اس نئے شعبے کے محرک و نگران مولانا راشد الحق سمیع نے تخصص Specializationکے موضوعات کے بارے میں شرکا کو بتایا کہ اس میں دعوتی اسالیب،تحریر وتقریر، کمپیوٹر کورسز،صحافت،سیرت وتصوف،عقیدہ ختم نبوت، اسلامی اور مغربی تہذیب و تمدن، تاریخ اسلام،عربی انگریزی زبانوں کے ساتھ آئین پاکستان اور اسلامی و بین الاقوامی قوانین اور جدید اسلامی بینکاری،مستشرکین و مغربی دانشوروں کی اسلام پر یلغار اور تقابل ادیان وغیرہ پر  خصوصی محاضرات  (لیکچرز) دیے جائیں گے جس میں دارالعلوم حقانیہ کے مشائخ کے علاوہ پاکستان،عالم عرب، اور ہندوستان وغیرہ کے جید اکابر علما، محققین بھی لیکچر دیں گے۔ نیز درسگاہ میں آن لائن لیکچرز کے لئے انتظامات اور جدید ترین کمپیوٹرلیب بھی مہیا کی گئی ہے،اس موقع پر اجتماعی طورپر فیصلہ کیا گیا کہ ان شا اللہ آئندہ سال تخصص فی الحدیث اور تخصص فی التفسیر بھی دارالعلوم حقانیہ میں حضرت مہتمم صاحب کی سرپرستی میں شروع کیاجائے گا۔یاد رہے کہ دارالعلوم حقانیہ میں نئے تخصص دعوہ والارشاد صوبہ خیبرپختونخوا میں اس قسم کا پہلا شعبہ ہے جو جدید ترین سہولیات اور اپنے منفرد جامع نصاب کے حوالے سے بڑی اہمیت کا حامل ہے۔تقریب کا اختتام شیخ الحدیث حضرت مولانا انوارالحق حقانی صاحب کی دعا پر ہوا۔ تقریب کے مقررین نے مولانا راشد الحق سمیع کی اس نئی علمی کوشش کو سراہا اور انہیں دعائیں دیں، تقریب میں  دارالعلوم کے اساتذہ ودیگر شعبہ زندگی کے ماہرین بھی شریک تھے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -