کوٹ مٹھن یکجہتی کانفرنس،منظم سازش کے تحت تاریخی شہر کی حیثیت کم کی گئی،  غلام فرید کوریجہ 

کوٹ مٹھن یکجہتی کانفرنس،منظم سازش کے تحت تاریخی شہر کی حیثیت کم کی گئی، ...

  

 را جن پور(نا مہ نگار)پاکستان میں روحانیت اور روحانی مقامات کے خلاف ایک سوچ پروان چڑھائی جا رہی ہے۔خواجہ فرید کے  مسکن کوٹ مٹھن میں ادارے ختم کر کے اسے پسماندگی کی طرف دھکیلا جا رہا ہے ان(بقیہ نمبر4صفحہ6پر)

 خیالات کا اظہارچیئرمین  تحریک فرید وسرائیکستان صوبہ محاذ کے صدر خواجہ غلام فرید کوریجہ و دیگر مقررین نے,,کوٹ مٹھن یکجہتی کانفرنس،، کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ ماضی میں کوٹ مٹھن علمی،تعلیمی، مذہبی  اورمعاشی طور پر ترقی یافتہ شہر تھا مگر بعض قوتوں نے اسے کمزور کیا ایک منظم سازش کے ذریعے اس کی سیاسی اورتاریخی اہمیت کم کرنے کی سازش کی گئی انگریز کے ادوار میں اسے تحصیل کا درجہ حاصل تھا اب اس کی میونسپلٹی کی حیثیت  بھی ختم کر دی گئی ہے یہاں پر رہائش پذیر  خاندان سہولتوں کے فقدان کی وجہ سے نقل مکانی کر گئے فیری سروس کے ادوار میں یہ سکھر سے بھی پہلے بڑی بندر گاہ تھی۔تاریخی اہمیت کے شہروں کو نمایاں حیثیت دی جاتی ہے جیسے ننکانہ صاحب کو بابا گورونانگ کی جائے پیدائش کی وجہ سے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر، سیون شریف کو تحصیل اور 3 کلو میٹر کے ویٹی گن سٹی کو رومن کیتھولک فرقے کا مرکز ہونے کی وجہ سے ملک کے برابر درجہ حاصل ہے دوسری طرف خواجہ فرید کے مسکن کوٹ مٹھن کی تحصیل ہیڈ کوارٹر اور میونسپل کمیٹی کا خاتمہ،نادرہ،آئی سنٹر،سوئی گیس اور گرڈ اسٹیشن کی منظوری ختم کی گئی انہوں نے کہاکہ انڈس ہائی وے دو رویہ نہ ہونے کی وجہ سے روزانہ حادثات کے نتیجے میں لوگوں کو نعشیں اٹھانا پڑ رہی ہیں اسے دو رویہ کیا جائے رورل ہیلتھ سنٹر کو آپ گریڈ کر کیتحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بنایا جائے کوٹ مٹھن تین صوبوں کا گیٹ وے ہے اسکی تحصیل کی حیثیت بحال کی جائے اس موقع پر ایک قرارداد پیش کر کے انڈس روڈ کو ڈبل کرنے، اور شہر فرید کی سابقہ تحصیل بحالی  اور روڈ حادثے میں شہید ہونے والوں کے ورثا کو حکومت پچاس پچاس لاکھ معاوضہ ادا کرے کرنے کی قراردادیں متفقہ طور پر منظور کی گئیں ضلعی چیئرمین امن کمیٹی قاری علامہ محمود قاسمی، صادقیہ فاؤنڈیشن کے چیرمین سید عاشق بخاری،ضلعی امیر جماعت اہلسنت قاری علامہ مولانا خورشید احمد رضا،سابق کونسلر راؤ غلام اکبر خاں راجپوت،رانا حق نواز ایڈوکیٹ،،خوا جہ اشفاق احمد ودیگر معززین شہر نے بھی کثیر تعداد میں شرکت کی ہے۔

غلام فرید کوریجہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -