زرعی سیکٹر کی ترقی کیلئے حکومتی اقدامات تیز، حسین جہانیاں گردیزی 

زرعی سیکٹر کی ترقی کیلئے حکومتی اقدامات تیز، حسین جہانیاں گردیزی 

  

 کبیروالا(تحصیل رپورٹر)   صوبائی بجٹ میں عوام کو بھرپوریلیف فراہم کیا جائے گا، زراعت قومی معیشت پر اثر انداز ہونے والا سب سے بڑا شعبہ ہے،وزیراعظم پاکستان عمران خان کے ویژن اور وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان احمد بزدار کی زیر قیادت زرعی شعبے کی بہتری کے لئے عملی اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں،امسال پنجاب میں میں دو کروڑ نو لاکھ میٹرک ٹن گندم پیدا ہوئی، گندم کی اچھی پیداوار، تین نئے(بقیہ نمبر6صفحہ6پر)

 بیجوں، کسانوں کو دی گئی پانچ ارب روپے کی سبسڈی اور بینکوں کے ون ونڈو آپریشن کی بدولت ممکن ہوئی،ان خیالات کااظہارصوبائی وزیر زراعت پنجاب سید حسین جہانیاں گردیزی نے چک نورنگ شاہ کبیروالامیں اپنی رہائشگاہ پر سیدگروپ کے رہنماؤں راؤ آصف سعیدی پھلانوالے،شیخ محمد ارشد سے ملاقات اور دیگرمعززین علاقہ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا ہے کہ ماضی کی حکومتوں نے زراعت کی ترقی پر زبانی جمع خرچ کرنے کے سوا کچھ نہیں،جس کی وجہ سے ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کاکرداراداکرنیوالا شعبہ ترقی نہ کرسکا۔ انہوں نے کہاکہ زرعی مداخل پر سبسڈی کے طریقہ کار کو شفاف بنانے کیلئے کسان کارڈ کا اجرا کیا گیاہے، جس کے تحت کاشتکاربراہ راست اس سہولت سے فائدہ اٹھا سکیں گے۔صوبائی وزیر زراعت سیدحسین جہانیاں گردیزی نے بتایا کہ کاشتکاروں کی پیداواری لاگت میں کمی کے لئے 300 ارب روپے کے وزیراعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام پر عملدرآمد جاری ہے، جس میں سے 28 ارب 59 کروڑ روپے سے آبپاش کھالوں کی اصلاح کے قومی منصوبہ کے تحت صوبہ میں 10 ہزار کھالہ جات پختہ کئے جا رہے ہیں جبکہ اس منصوبہ کے تحت اب تک 1200 لیزر لینڈ لیولرز سبسڈی پر کاشتکاروں کو مہیا کئے گئے ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ اب تک وزیراعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت کاشتکاروں میں 47 کروڑ روپے سے زائد کی زرعی مشینری سبسڈی پر فراہم کی جا چکی ہے۔ اس سکیم کے تحت ہارویسٹنگ مشینری اور سروس پروائیڈرز پر 16 فیصد سیلز ٹیکس کی شرح کو کم کرکے 2 فیصد پر لایا جا رہا ہے۔اس موقع پرامجد علی شاہ بخاری،ریاست علی،ملک محمد اشرف قمربھٹی،مہر طاہرحسین باٹی،وقاص خان بھٹہ،محمد علیم اوردیگر بھی موجود تھے۔

حسین جہانیاں گردیزی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -