سوشل میڈیا پرغیر قانونی حراست کامعاملہ ٹاپ ٹرینڈ‘سب انسپکٹر کو ٹکرمارنے والا سکول ٹیچر عدالت پیش، ضمانت منظور

 سوشل میڈیا پرغیر قانونی حراست کامعاملہ ٹاپ ٹرینڈ‘سب انسپکٹر کو ٹکرمارنے ...

  

مظفرگڑھ(بیورو رپورٹ،تحصیل رپور رٹر)سوشل میڈیا کا دباؤ کام کرگیا،ٹریفک حادثے کا سبب بننے والے موٹر سائیکل سوار ٹیچر(بقیہ نمبر20صفحہ6پر)

 لڑکے کو  ایک ہفتے سے زائد کی غیرقانونی حراست میں رکھنے کے بعد عدالت میں پیش کردیا گیا،مقامی مجسٹریٹ نے مدثر الطاف کی ضمانت منظور کرلی.تفصیلات کیمطابق 26 مئی کو پولیس لائن کے سامنے محمد فاروق سب انسپکٹر ایک گاڑی سے اترنے کے بعد موبائل فون سنتے ہوئے روڈ کراس کررہا تھا کہ اس دوران مدثر الطاف نامی موٹر سائیکل سوار نے بریک لگانے کی کوشش کی مگر ناکام رہا اور تیزرفتار موٹر سائیکل سب انسپکٹر سے ٹکراگئی،موٹرسائیکل ٹکرانے سے سب انسپکٹر محمد فاروق اور مدثر الطاف دونوں زخمی ہوگئے جنھیں ڈی ایچ کیو ہسپتال مظفرگڑھ منتقل کیا گیا تھا،،سب انسپکٹر کے زخمی ہونے کا باعث بننے پر تھانہ سول لائن پولیس نے مدثر الطاف کو زخمی حالت میں ڈی ایچ کیو ہسپتال مظفرگڑھ سے ہی گرفتار کرلیا تھا اور ہسپتال میں ہی ہتھکڑیاں بھی لگادی گئیں،نوجوان کو پولیس نے زخمی حالت میں غیرقانونی طور پر ایک ہفتے سے زائد تھانہ سول لائن میں بند رکھا گیا اور عدالت میں پیش نہیں کیا گیا تھا،،معاملے پر شہر کے نوجوانوں نے سوشل میڈیا پر مہم کا آغاز کیا تو معاملہ ٹاپ ٹرینڈ کرگیا،سوشل میڈیا پر معاملہ بہت زیادہ اجاگر ہونے پر تھانہ سول لائن پولیس کو نہ صرف نوجوان کی گرفتاری ظاہر کرنی پڑی بلکہ اسے گزشتہ روز مقامی مجسٹریٹ شاہد معظم کی عدالت میں بھی پیش کردیا گیا،،نوجوان مدثر الطاف جانب سے سید ساجد علی تقی ایڈووکیٹ ہائی کورٹ  چوہدری محمد شعیب قیوم ایڈوکیٹ عدالت میں پیش ہوئے.عدالت نے 50 ہزار روپے کے مچلکوں کے عوض مدثر الطاف کی ضمانت منظور کرلی.اس موقع پر حقوق مظفرگڑھ تحریک کے بانی رانا محمد افضل ودیگر بھی عدالت میں موجود تھے. 

سوشل میڈیا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -