این سی ایچ ڈی ٹیچرز کی11ماہ سے تنخواہیں بند، گھروں میں فاقے، متاثرین کااحتجاج

 این سی ایچ ڈی ٹیچرز کی11ماہ سے تنخواہیں بند، گھروں میں فاقے، متاثرین ...

  

 صادق آباد(تحصیل رپورٹر)ین سی ایچ ڈی ٹیچرز کی 11 ماہ سے تنخواہیں بندہیں تنخواہیں نہ ملنے سے نوبت فاقوں تک پہنچ (بقیہ نمبر40صفحہ7پر)

گئی آل پنجاب فیڈر ٹیچرز نے صدر ایف ٹی اے پنجاب میڈم سمیرا کنول کی زیر صدرت احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ ہم اساتذہ قوم کے معمار ہیں اور ہمیں کئی ماہ سے تنخواں سے محروم رکھا گیا ہے اور ہمارے جائز مطالبات بھی تسلیم نہیں کئے جا رہے ان خیالات کا اظہار صدر ایف ٹی اے پنجاب میڈم سمیرا کنول نے احتجاج کے دوران صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ان کا کہنا تھا کہ تمام اساتذہ کو وفاقی حکومت سے نان ڈویلپمنٹ کر کے صوبوں میں منتقل کیا جائے گورنمنٹ کے سرور س ٹییکچر کے مطابق تمام تر قوانین ان اساتذہ پر نافذ کئے جائیں اساتذہ کو پینش سمیت تمام تر سہولیات مہیا کی جائیں این سی ایچ ڈی کے اساتذہ کو گورنمنٹ کے پرائمری اساتذہ کے برابر سکیل دے کر منتقل کیا جائے ہمارے سکولوں میں تمام تر سہولیات مہیا کی جائیں اور تمام تر اساتذہ جو کئی ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہیں اور ان کے گھرو ں میں نوبت فاقوں تک پہنچ گئی ہے ان کو فوری تنخواہیں جاری کی جائیں ان کا مزید کہنا تھا کہ ہمارے جائز حقوق پورے کئے جائیں ان تمام حقوق کے بغیر کوئی پالیسی ہمیں قطعی نا منظور ہو گی ا ن کا کہنا تھا کہ پنجاب بھر کے این سی ایچ ڈی اور بی ای سی ایس کے اساتذہ کے مطالبات منظور نہ کئے گئے تو تمام صوبوں کے اساتذہ احتجاج کرنے اور دھرنا دینے پر مجبور ہوں گے ان کا کہنا تھا کہ 30 جون کی پالیسی ہمارے مطالبات کے مطابق بنائی جائے اور ہم اساتذہ کو ایک مزدور کے برابر تصورنہ کیا جائے اور ہمارے حق میں ہمارے جائز مطالبات پورے کئے جائیں انہوں نے مطالبہ کیا کہ اب بجٹ آنے والا ہے ہمیں بجٹ میں شامل کیا جائے۔

ٹیچرز

مزید :

ملتان صفحہ آخر -