مظفرگڑھ:جعلی آفیسر بن کر پولیس کو کال کرنیوالے  منا شیخ کی ضمانت منظور، انتقامی کارروائیاں بند کرائی جائیں، سابق امیدار قومی اسمبلی کی میڈیا سے گفتگو

 مظفرگڑھ:جعلی آفیسر بن کر پولیس کو کال کرنیوالے  منا شیخ کی ضمانت منظور، ...

  

 مظفرگڑھ(بیورو رپورٹ،تحصیل رپور رٹر ) پولیس کی جانب سے گرفتار کیے گئے کو سابق امیدوار مناشیخ کو عدالتوں سے ضمانت(بقیہ نمبر46صفحہ6پر)

 مل گئی،،مناشیخ پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ انھوں نے حساس ادارے کا جعلی آفیسر بن کر مبینہ طور پر سب انسپکٹر اپنے ساتھی کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا،جبکہ ناجائز اسلحہ رکھنے کے الزام میں بھی ان پر مقدمہ درج کرلیا گیا تھا.تفصیلات کیمطابق گزشتہ عام انتخابات میں مظفرگڑھ کے حلقہ این اے 182 سے آزاد امیدوار میاں محمد حسین مناشیخ جمعہ کے روز تھانہ سول لائن پولیس نے کو گرفتار کرکے انکے خلاف 2 مقدمات درج کیے تھے.مناشیخ پر حساس ادارے کا جعلی آفیسر بن کر پولیس آفیسر کو کال کرنے اور ساتھی کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دینے اور ناجائز اسلحہ رکھنے کے الزامات عائد کیے گئے تھے.سابق آزاد امیدوار مناشیخ کو گزشتہ روز مقامی مجسٹریٹس کی 2 عدالتوں میں پیش کیا گیا،اس موقع پر میاں محمد حسین مناشیخ کے وکیل میاں ارشد نعیم ایڈوکیٹ بھی عدالتوں میں پیش ہوئے  اور مناشیخ کی ضمانت کے حق میں دلائل دئیے،عدالتوں نے 50،50 ہزار روپے کے مچلکوں کے عوض دونوں مقدمات میں مناشیخ کی ضمانت منظور کرلی.ضمانت منظور ہونے کے بعد اپنے وکیل میاں ارشد نعیم ایڈوکیٹ کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مناشیخ کا کہنا تھا کہ انکے خلاف انتقامی کارروائی کی جارہی ہے،انکے والد نے مظفرگڑھ کی ضلعی انتظامیہ کو اس شرط پر فلاحی مقاصد کے لیے زمین دی تھی کہ وہ فروخت نہیں کی جائیگی.مناشیخ کا کہنا تھا کہ نہ صرف انکے والد کی جانب سے دی گئی زمین فروخت کی گئی بلکہ مظفرگڑھ پولیس انکے خاندان کی شہر میں موجود بیشتر اراضی پر قابض ہے سابق آزاد امیدوار نے چیف جسٹس سپریم کورٹ اور وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ وہ مظفرگڑھ کی ضلعی انتظامیہ سے انکی کھربوں روپے مالیت کی زمین کا قبضہ واپس کروائیں.ان کا کہنا تھا کہ انکے موبائل کا ڈیٹا نکلوائیں اگر کالز ثابت ہوجائیں تو جو مرضی کیس بنائیں.اس موقع پر میاں محمد حسین مناشیخ کے سپورٹرز کی بڑی تعداد بھی عدالت میں موجود تھی۔

منا شیخ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -