گرم موسم، پانی کی عدم دستیابی، کپاس فصل کو نقصان پہنچنے کاخطرہ

 گرم موسم، پانی کی عدم دستیابی، کپاس فصل کو نقصان پہنچنے کاخطرہ

  

ہارون آباد(نامہ نگار)حکومت کپاس کی امدادی قیمت مقرر کرے، امسال ایک لاکھ سے زائد ایکڑ پر کاشت کی گئی کپاس کو نہری وارہ بندی سے نقصان پہنچنے کا خطرہ لاحق ہے، تفصیلات کے مطابق تحصیل ہارون آباد میں امسال ایک لاکھ سے زائد ایکڑ راضی پر کپاس (بقیہ نمبر50صفحہ7پر)

کاشت کی گئی ہے لیکن انتہائی گرم موسم اور نہری وارہ بندی کے باعث پانی کی عدم دستیابی کے باعث کپاس کی فصل کو شدید نقصان پہنچنے کا خطرہ لاحق ہوگیا ہے، جس پر مقامی کاشتکاروں یوسف، عطاء اللہ، ثناء اللہ، راحیل، معظم عالم و دیگر کا کہنا ہے کہ کاشتکاروں کو ریلیف دیا جائے اور حکومت گندم کی طرح کپاس کی بھی امدادی قیمت مقرر کرے تاکہ کاشتکار مڈل مین کی دسترس سے باہر ہوسکے، کاشتکاروں کا مزید کہنا تھا کہ نہری وارہ بندی کا خاتمہ کیا جائے تاکہ پیدوار متاثر نہ ہو کیونکہ کپاس کی فصل علاقہ ہارون آباد کی نقد آور فصل ہے جسکی بہتر پیدوار نہ صر ف کسانوں بلکہ ملکی معیشت میں ایک ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے۔  

کپاس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -