سندھ ہائیکورٹ کاصوبہ بھر میں   محکمہ جنگلات کی زمینوں کی الاٹمنٹ منسوخ کرنے کا حکم 

سندھ ہائیکورٹ کاصوبہ بھر میں   محکمہ جنگلات کی زمینوں کی الاٹمنٹ منسوخ کرنے ...

  

سکھر(این این آئی)سندھ ہائی کورٹ نے صوبے بھر میں محکمہ جنگلات کی زمینوں کی الاٹمنٹ منسوخ کرنے کا حکم دے دیا،بااثرلوگوں کے قبضے اور الاٹمنٹ کے حوالے سے نیب کو تحقیقات کرکے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت،عدالت عالیہ کا تحریری فیصلہ سامنے آگیا تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ سکھر بینچ کی جانب سے صوبے میں محکمہ جنگلات کی زمینوں پر قبضوں کے حوالے سے دیا گیا تحریری فیصلہ سامنے آگیا جس میں عدالت نے سندھ حکومت کو صوبے بھر میں محکمہ جنگلات کی زمینوں کی گئی الاٹمنٹ فوری طور پر منسوخ کرنے کا حکم دیا  عدالتی فیصلے کی کاپی کے مطابق عدالت عالیہ نے عدالتی احکامات کے باوجود قبضہ کی زمینوں کو پانی فراہم کرنے پر چیف انجنیئر کوٹری بیراج اور سپرنٹنڈنٹ انجینئر کے وارنٹ گرفتاری جاری کرنے اوروارنٹ پر ایس ایس پی جامشورو کو فوری عمل کرنے کا بھی حکم دیا جبکہ اپنے حکم میں عدالت عالیہ نے حیسکو اور سیپکو کو قبضے کی زمینوں پر چلنے والے تمام بجلی کے کنیکشن منقطع کرنے کی ہدایت دی اور ٹنڈوالہیار کے وڈیرے سرفراز نظامانی کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کرنے کے احکامات بھی جاری کیے اور اس حوالے سے ملزم کی اسلام آباد میں موجودگی پر آئی جی اسلام آباد اور آئی جی سندھ کو گرفتار کرنے کا حکم دیا عدالت نے فیصلے میں نیب کو حکم دیا کہ وہ محکمہ جنگلات کی زمینوں کی الاٹمنٹ اور قبضوں کے حوالے سے تحقیقات کرکے رپورٹ آئندہ سماعت پر عدالت میں پیش کرے تحریری فیصلے میں پٹیشن کی مزید سماعت 6 جولائی تک ملتوی کردی۔

سندھ ہائیکورٹ

مزید :

صفحہ اول -