سپین نئے تعلیمی سال کے آغاز پر12سے 17سال کے بچوں کو ویکسین لگائے گا

سپین نئے تعلیمی سال کے آغاز پر12سے 17سال کے بچوں کو ویکسین لگائے گا
سپین نئے تعلیمی سال کے آغاز پر12سے 17سال کے بچوں کو ویکسین لگائے گا

  

بارسلونا(ارشد نذیر ساحل )سپین حکومت نے نئے تعلیمی سال کے آغاز سے قبل 12 سے 17 سال کی عمر کے بچوں کو کوروناویکسین لگانے کا عندیہ دیاہے ۔وزیر صحت کیرولینا ڈاریس نے ٹیلی ویژن انٹرویو کے دوران کہاہے کہ یہ منصوبہ پبلک ہیلتھ کمیشن کےسامنے پیش کیا جائے گا۔

یورپی میڈیسن ایجنسی نے گزشتہ ہفتے 12 سے 15 سال کی عمر کے بچوں کو فائیزرز اور بائیوٹیک کورونا ویکسین منظوری دی تھی۔یہ یورپ میں بچوں کے لئے منظور کی گئی پہلی ویکسین ہے، سپین نے گرمیوں کے آخر تک 70 فیصد آبادی کوویکسین لگانے کا منصوبہ بنا رکھاہے۔سپین کے علاوہ دیگر یورپی ممالک نے بھی بچوں کو ویکسین لگانے کا اعلان کیا ہے۔فرانس نے بدھ کے روز اعلان کیا کہ وہ 15 جون سے 12 سے 18 سال تک کی عمر کے بچوں کو ویکسین لگائے گا۔اٹلی اور جرمنی نے جمعرات سے 12 سال سے زائد عمر کے بچوں کو ویکسین لگانے کا اعلان کیاہے۔

مزید :

بین الاقوامی -