100 انڈیکس 125.89 پوائنٹس اضافے سے 33368.84 پر بند

100 انڈیکس 125.89 پوائنٹس اضافے سے 33368.84 پر بند

کراچی(اکنامک رپورٹر) کراچی اسٹاک ایکسچینج (کے ایس ای) میں تیزی کا رجحان رہا، کے ایس ای 100 انڈیکس 125.89 پوائنٹس کے اضافہ سے 33368.84 پوائنٹس پر بند ہوا۔ تفصیلات کے مطابق کاروباری ہفتہ کے چوتھے روز جمعرات کو کراچی اسٹاک ایکسچینج میں حصص کی خرید و فروخت میں تیزی کا رجحان رہا اور کے ایس ای 100 انڈیکس 125.89 پوائنٹس کے اضافہ سے 33368.84 پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای 30 انڈیکس بھی 71.75 پوائنٹس کی تیزی سے 21787.45 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مزیدبرآں کے ایس سی آل شیئر انڈیکس میں 69.89 پوائنٹس کا اضافہ رونماء ہوا جبکہ کے ایم آئی 30 انڈیکس میں بھی 357.98 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ بینکس ٹریڈ ایبل (بی اے ٹی آئی) انڈیکس 69.13 پوائنٹس کی مندی سے 17590.30 پوائنٹس پر بند ہوا تاہم آئل اینڈ گیس ٹریڈ ایبل (او جی ٹی آئی) انڈیکس 139.83 پوائنٹس کی تیزی سے 17839.81 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مارکیٹ میں مجموعی طور پر 361 کمپنیوں کے حصص کا لین دین ہوا جن میں سے 193 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 150 کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں مندی اور 18 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ سب سے زیادہ تیزی ایکسائیڈ پاکستان کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی جس کے حصص کی قیمت 65.43 روپے کے اضافہ سے 1374.15 روپے پر بند ہوئی۔ اسی طرح پاک سروسز کے حصص کی سودے بھی 21.75 روپے کی تیزی سے 456.75 روپے پر بند ہوئے۔ سب سے زیادہ مندی رفحان میز پروڈکٹس اور شیزان انٹرنیشنل کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی۔ رفحان میز پروڈکٹس کے حصص کی قیمت 140 روپے کی مندی سے 10350 روپے اور شیزان انٹرنیشنل کے حصص کی قیمت بھی 54.42 روپے کی کمی سے 1034.08 روپے رہ گئی۔ سب سے زیادہ کاروبار کے- الیکٹرک لمیٹڈ کے حصص میں ہوا جو 2 کروڑ 13 لاکھ 59 ہزار 500 شیئرز رہا جس کی قیمت 7.90 روپے سے شروع ہو کر 8 روپے پر بند ہوئی۔ مجموعی طور پر 17 کروڑ 65 لاکھ 20 ہزار 280 حصص کا کاروبار ہوا جس کا تجارتی حجم 9 ارب 9 کروڑ 18 لاکھ 36 ہزار 482 روپے رہا۔ مارکیٹ کیپیٹل 74 کھرب 96 ارب 38 کروڑ 47 ہزار 864 روپے سے بڑھ کر 75 کھرب 18 ارب 37 کروڑ 54 لاکھ 45 ہزار 683 روپے ہو گیا۔ فیوچر ٹریڈنگ میں 128 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 13 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں مندی اور 4 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا جبکہ 2 کروڑ 10 لاکھ 23 ہزار 500 حصص کا کاروبار ہوا۔

مزید : کامرس